Abd Add
 

شمارہ یکم جنوری 2011

پندرہ روزہ معارف فیچر کراچی
جلد نمبر:4، شمارہ نمبر:1

دہشت گردی کو سامنے آکر قابو کرنا ہوگا: کیمرون منٹر

January 1, 2011 // 0 Comments

پاکستان میں امریکا کے نئے سفیر کیمرون منٹر کیریئر ڈپلومیٹ ہیں۔ سربیا میں سفیر رہ چکے ہیں۔ عراق، چیک جمہوریہ اور پولینڈ میں بھی اہم سفارتی مناصب پر فائز رہے ہیں۔ کیمرون منٹر سے نیوز ویک پاکستان کے فرحان بخاری اور فصیح احمد نے جو گفتگو کی اس کے اقتباسات ہم قارئین کی خدمت میں پیش کر رہے ہیں۔ ٭ کچھ عرصہ قبل پاکستان اور امریکا کے درمیان اسٹریٹجک مذاکرات ہوئے تھے۔ ان مذاکرات سے بہت سی توقعات بھی تھیں اور خیال کیا جارہا تھا کہ ان سے بہت کچھ حاصل ہوگا۔ مگر ایسا کچھ نہیں ہوا۔ ان مذاکرات کے نتیجے میں کسی بہتری کی توقع رکھنے والوں کی تعداد خاصی کم ہے۔ آپ اس معاملے کو کس طرح دیکھتے ہیں؟ کیا یہ امر آپ [مزید پڑھیے]

بین الاقوامی تعلقات اور ہم آہنگ مفادات

January 1, 2011 // 0 Comments

سابق وزیر خارجہ صاحبزادہ یعقوب علی خان کا پاکستان کی تاریخ میں ایک اہم مقام ہے۔ آپ رام پور کے شاہی خاندان کے چشم و چراغ اور دوسری جنگ عظیم کے ویٹرن ہیں ’’نیوز ویک‘‘ پاکستان کی نیلوفر بختیار نے اسلام آباد میں صاحبزادہ یعقوب علی خان سے بات چیت کی جو ہم آپ کی خدمت میں پیش کر رہے ہیں: نیوز ویک: پاکستان کے سیاسی عدم استحکام میں کن عوامل نے مرکزی کردار ادا کیا ہے؟ صاحبزادہ یعقوب علی خان: بھارت میں جواہر لعل نہرو نے آزادی کے فوراً بعد جاگیرداری نظام ختم کردیا۔ اس دور میں مسلمانوں کے پاس زرعی زمینیں اچھی خاصی تھی۔ نہرو نے ایک تیر سے دو نشانے لگائے۔ ایک طرف تو مسلمانوں کو بڑے پیمانے پر زرعی اراضی رکھنے [مزید پڑھیے]

ارضِ مقدس کی تقسیم

January 1, 2011 // 0 Comments

اسرائیلی حکومت اور فلسطینی اتھارٹی کے حکام کے درمیان بات چیت تھم گئی ہے۔ ایسے میں اسرائیل میں نئے انتخابات کی باتیں ہو رہی ہیں جو ۲۰۱۱ء میں ہونے ہیں۔ ان انتخابات کا بنیادی نکتہ فلسطینی علاقوں میں یہودی بستیوں کا قیام ہے۔ اسرائیلی وزیر اعظم بنیامین نیتن یاہو بظاہر اپنی پارٹی پر غیر معمولی گرفت کے حامل دکھائی دیتے ہیں۔ ایہود بارک ۹ برسوں میں لیبر پارٹی کے پانچویں لیڈر ہیں۔ اور ان کی پوزیشن بھی بہت نازک ہے کیونکہ ۱۲۰ رکنی ایوان میں لیبر پارٹی کی نشستیں صرف ۱۳ رہ گئی ہیں۔ ایوشے بریورمین ممکنہ طور پر لیبر پارٹی کے لیڈر بن سکتے ہیں۔ وہ ماہر معاشیات ہیں اور بنیامین نیتن یاہو کی کابینہ میں اقلیتی امور کے وزیر کی حیثیت سے خدمات [مزید پڑھیے]

امنِ عالم کا چیلنج اور سیرت نبویﷺ

January 1, 2011 // 0 Comments

صنعتی اور سائنسی انقلاب تک امن کی بحالی کا کام کچھ زیادہ پیچیدہ نہ تھا مگر اب موجودہ صدی میں جب کہ دنیا کی آبادی بہت زیادہ بڑھ گئی ہے، زندگی کافی ایڈوانس ہو چکی ہے۔ انسانی قدریں رفتہ رفتہ رخصت ہو رہی ہیں اور ان کی جگہ حیوانی قدریں انسانی معاشرے میں اپنی جڑیں مضبوط کر رہی ہیں۔ آج کے انسان کی ترجیحات میں یہ بات شامل ہے کہ وہ زیادہ سے زیادہ پیسہ حاصل کرے۔ زن، زر اور زمین جنہیں کسی زمانے میں جھگڑے کی بنیاد کہا جاتا تھا اور انسان کو ان سے بچنے کی تلقین کی جاتی تھی آج کے انسان نے ان ہی چیزوں کو اپنی ترجیحات میں شامل کر لیا ہے۔ اگر کسی کو یہ چیزیں حاصل ہیں تو [مزید پڑھیے]

اب امریکا کے بڑے بینکوں کی باری؟

January 1, 2011 // 0 Comments

وکی لیکس وہ ویب سائٹ ہے جس نے قیامت ہی ڈھا دی ہے۔ پہلے عراق سے متعلق ۳ لاکھ ۹۲ ہزار اور اس کے بعد افغانستان کے بارے میں امریکا کی ۷۶ ہزار خفیہ دستاویزات جاری کیں اور امریکا اور اس کے اتحادی ممالک میں ہنگامہ برپا ہوگیا۔ اب وکی لیکس نے ڈھائی لاکھ سے زائد خفیہ امریکی دستاویزات جاری کرنے کا سلسلہ شروع کیا ہے تو پھر بحرانوں کے آثار ہیں۔ وکی لیکس کے بانی جولین اسانچ کے بارے میں دنیا جانتی ہے کہ وہ امریکا کی خفیہ دستاویزات جاری کرنے کے مشن پر نکلے ہوئے ہیں۔ اب تک ماہرین یہ طے نہیں کرسکے کہ وکی لیکس کے بانی اس میدان میں تنہا کھڑے ہیں یا ان کے ساتھ کوئی اور نادیدہ قوت بھی [مزید پڑھیے]