Abd Add
 

شمارہ 16 ستمبر 2010

پندرہ روزہ معارف فیچر کراچی
جلد نمبر:3، شمارہ نمبر:18

مغرب نے دہرا معیار اپنا رکھا ہے!

September 16, 2010 // 0 Comments

پاکستان کے جوہری پروگرام کے بانی اور مرکزی کردار ڈاکٹر عبدالقدیر خان نے ۲۰۰۴ء میں ٹیلی وژن پر اعتراف کیا تھا کہ انہوں نے ایران، شمالی کوریا اور لیبیا کو جوہری ٹیکنالوجی فراہم کی۔ اعتراف کے بعد انہوں نے خاصی خاموش زندگی بسر کی ہے۔ وہ تقاریب میں شرکت سے گریز کرتے ہیں۔ میڈیا پر انہیں کم ہی دیکھا جاسکتا ہے۔ اپنے ملک میں ہیرو اور بیرون ملک عالمی سلامتی کے لیے خطرہ سمجھے جانے والے ڈاکٹر عبدالقدیر خان سے فصیح احمد نے ای میل کے ذریعے انٹرویو کیا ہے۔ o پاکستان کے جوہری اثاثوں کو اسلامی بم قرار دیا جاتا ہے۔ کسی بھی دوسرے اسلامی ملک کے پاس جوہری بم نہیں، تو کیا پاکستانی جوہری اثاثوں کو اسلامی بم قرار دینا درست ہے؟ عبدالقدیر [مزید پڑھیے]

’’عراق مشن‘‘ ختم ہوا؟

September 16, 2010 // 0 Comments

ڈیموکریٹک پارٹی نے عراق جنگ کی مخالفت کے ذریعے امریکی ووٹروں کی توجہ حاصل کی تھی۔ بارک اوباما کو اندازہ تھا کہ عراق جنگ نے امریکیوں کو نفسیاتی خلجان میں مبتلا کر رکھا ہے اور ایسے میں اس جنگ کی شدید مخالفت کرکے ہی ان کا اعتماد حاصل کیا جاسکتا ہے۔ یہی سبب ہے کہ انہوں نے انتخابی مہم کے دوران عراق جنگ کے خلاف بڑھ چڑھ کر خیالات کا اظہار کیا۔ انہوں نے ووٹروں کو یاد دلایا کہ وہ ابتدا ہی سے اس جنگ کے خلاف تھے۔ دوسری جانب ڈیموکریٹک پارٹی کی جانب سے صدارت کے منصب کے لیے امیدواری کی امیدوار (اور موجودہ وزیر خارجہ) ہلیری کلنٹن نے عراق جنگ کی مخالفت میں کچھ زیادہ بولنے سے گریز کیا جس کا خمیازہ بھی [مزید پڑھیے]

بھارتی حکومت وعدے پورے کرنے میں ناکام!

September 16, 2010 // 0 Comments

بھارتی حکومت کی اب تک کی کارکردگی وعدوں سے خاصی کم رہی ہے۔ ایسا نہیں ہے کہ اسے مکمل ناکام قرار دیا جاسکتا ہے۔ معیشت کو مستحکم کرنے کے حوالے سے اس کی کارکردگی عمدہ رہی ہے مگر جو کچھ کیا جانا چاہیے تھا وہ نہیں کیا جاسکا۔ کامن ویلتھ گیم بھارت میں ۳؍ اکتوبر سے شروع ہو رہے ہیں۔ ان کھیلوں کے لیے بھارتی حکومت نے اب تک جو تیاریاں کی ہیں وہ خاصی ناکافی دکھائی دیتی ہیں۔ دہلی میں تیار کیے جانے والے اسٹیڈیم کا حال یہ ہے کہ چھت سے پانی ٹپک رہا ہے۔ ایتھلیٹ ولیج میں کچن کی سہولت دستیاب نہیں۔ مون سون کی بارشوں کے دوران مچھروں کی افزائش روکنے کے لیے خاطر خواہ حد تک اسپرے نہیں کیا گیا۔ [مزید پڑھیے]

حجاب پر پابندی فرانس کو مہنگی پڑے گی!

September 16, 2010 // 0 Comments

فرانس اور بیلجیم نے اسلامی حجاب پر پابندی عائد کرنے کا فیصلہ تو کرلیا تاہم اب انہیں اس کا خمیازہ بھی بھگتنا پڑ رہا ہے۔ فرانسیسی حکومت اور پارلیمنٹ نے حجاب پر پابندی کے معاملے کو بہت حد تک انا کا مسئلہ بنالیا جس کے باعث موقف ترک کرنا اس کے لیے شدید مشکلات پیدا کرسکتا ہے۔ فرانس کی سینیٹ ماہ رواں کے دوران حجاب پر مکمل پابندی کے حق میں ووٹ دینے والی ہے۔ قومی اسمبلی اس بل کو پہلے ہی منظور کرچکی ہے۔ سینیٹ سے منظوری کے بعد اس بل کو قانون کی شکل میں نافذ کرنا ہوگا۔ فرانس کی سیاحت کی صنعت کے لیے یہ موت کا پیغام ہوسکتا ہے۔ جب سے فرانس میں پردے پر پابندی کا معاملہ چلا ہے تب [مزید پڑھیے]

سیلاب: پانی تو جا رہا ہے، مگر۔۔۔۔۔

September 16, 2010 // 0 Comments

سیلاب نے پاکستان کو جس تباہی سے دوچار کیا ہے اس کی مثال ملک کی تاریخ میں تو خیر ملتی ہی نہیں، خطے میں کم ہی ملے گی۔ بنگلہ دیش اور بھارت میں بھی مون سون کی بارش کے زمانے میں سیلاب آیا کرتے ہیں مگر ان کا دائرہ اس قدر وسیع نہیں ہوا کرتا۔ پاکستان میں تقریباً بیس فیصد اراضی ڈوب گئی اور فصلوں کے تلف ہونے کی صورت میں ملک کی معیشت کو پہنچنے والا نقصان ۱۰۰؍ارب روپے سے زیادہ ہے۔ جب سیلابی ریلے آئے تو لوگوں کو سنبھلنے کا موقع بھی نہ ملا اور ان کا سبھی کچھ بہہ گیا۔ ذخیرہ کی ہوئی خوراک، مویشی، بیج، کھاد، زرعی آلات، گھریلو سامان اور خدا جانے کیا کیا سیلاب کی نذر ہوا۔ اب کسانوں [مزید پڑھیے]