انٹرویوز

اسلام اور تہذیبِ یورپ

June 1, 2014 // 3 Comments

ڈاکٹر سباعی: اسلام دینِ آزادی ہے، وہ نہ یہ پسند کرتا ہے کہ مسلمان کسی بھی سامراجی طاقت کے آگے جھکیں اور نہ یہ کہ وہ کاروبارِ زندگی میں پیچھے رہ جائیں۔ اسلام ہی کی تعلیمات نے عربوں کو ۱۴ سو برس سے ہر قسم کے بے ہودہ رسم و رواج سے محفوظ رکھا ہے۔ یہ اسلام ہی تھا، جس نے عربوں کو امن و انصاف اور آزادی کا پیغامبر بنا کر اقوام عالم کی طرف بھیجا

ملکوں کے مابین معاہدانہ تعلقات اور عسکری اقدام

March 16, 2014 // 0 Comments

قیامِ پاکستان کے فوراً بعد جہادِ کشمیر کے حوالے سے ایک اہم سوال پیدا ہوا تھا۔ اس وقت ممتاز دینی اسکالر مولانا سید ابوالاعلیٰ مودودیؒ کا ایک خاص مؤقف تھا، جس پر بعض حلقوں نے خاصا شور مچایا۔ ان پر شدید تنقید کی گئی۔ مگر وہ اپنے علمی مؤقف پر اپنے دلائل کے ساتھ قائم رہے۔ اسی بحث کے تناظر میں ۱۷؍اگست ۱۹۴۸ء کو مولانا مودودی نے سہ روزہ ’’کوثر‘‘ کو ایک تفصیلی انٹرویو دیا، جس میں اس موقف کو پوری صراحت اور وضاحت سے بیان کیا۔ ہم اس تاریخی انٹرویو کو قارئین کے لیے دوبارہ پیش کر رہے ہیں۔ آج کل بھی ہمارے ہاں اِسی طرح کی بحث جاری ہے۔ اِن علمی نکات سے معاملے کی تفہیم میں مدد مل سکتی ہے۔

جنگی مقدمات اور گرفتاریاں اسلامی لہر کو روکنے کے لیے ہیں!

March 16, 2012 // 0 Comments

بنگلہ دیش کے معروف نشریاتی ادارے ’’اے ٹی این نیوز‘‘ نے سابق امیر، بنگلہ دیش جماعت اسلامی، پروفیسر غلام اعظم کا تفصیلی انٹرویو ۱۲؍دسمبر ۲۰۱۱ء کو پیش کیا۔ گرفتاری سے قبل ’’اے ٹی این نیوز‘‘ نے انٹرویو کو بنگلہ اور انگریزی زبان میں اپنی ویب سائٹ میں شامل کیا۔ جسے مسئلہ کی پیچیدہ نوعیت اور بیگم حسینہ واجد حکومت کے ارادوں سے آگاہی کے لیے قارئینِ ’’معارف فیچر‘‘ کی خدمت میں پیش کیا جارہا ہے۔

گوریلا جنگ لڑنے کے سوا کوئی چارہ نہیں !

February 1, 2007 // 0 Comments

صومالی اسلامک کورٹ کونسل کے چیئرمین شیخ حسن طاہراویس کا کہنا ہے کہ ہماری کونسل تمام صومالی تنظیموں اوربین الاقوامی اداروں جس میں امریکی انتظامیہ سبھی شامل ہے کے ساتھ بات چیت کے لیے تیار ہے‘ میں نے محض صومالیہ میں امن و امان کی بحالی کی وجہ سے اپنی اس آمادگی کااظہارکیاہے

روپرٹ مردوک سے دس سوالات

February 1, 2007 // 0 Comments

سالہ Rupert Murdoch جو فاکس نیوز کے بانی نیوز کارپوریشن کے چیئرمین اور منتظم اعلیٰ ہیں نیز میڈیا کی چند عالمی دماغ عفریت پیکر شخصیات میں سے ایک ہیں۔ٹائم کے منیجنگ ایڈیٹر Richard Stangel سے گفتگو کی ہے گفتگو جانبد اری اور تعصب سے متعلق تھی اور اس حوالے سے تھی کہ ان کے مستقبل کے بزنس میں My Space کیا مفہوم رکھتا ہے جو کہ ان کے رو زمرہ کے انفارمیشن کے لیے بہت ہی قابل اعتماد ذریعہ ہے۔

شاویز صدربش کے خلاف کیوں؟

October 16, 2006 // 0 Comments

شاویز: میرا خیال ہے کہ الفاظ میں بہت وزن ہوتا ہے اور میں چاہتا ہوں کہ لوگوں کو معلوم ہو کہ میں کیا چاہتا ہوں۔ میں صدر بش پر حملہ نہیں کر رہا ہوں بلکہ میں محض ان کے حملے کا جواب دے رہا ہوں۔ بش دنیا پر حملہ کرتے رہے ہیں اور وہ بھی صرف الفاظ کے ساتھ نہیں بلکہ بموں سے حملہ کرتے رہے ہیں۔ جب میں یہ باتیں کرتا ہوں تو میرا خیال ہے کہ میں بہت سارے لوگوں کی طرف سے کرتا ہوں

ایک طاقتور ایران خطے کے مفاد میں ہے!

October 1, 2006 // 0 Comments

ایران ایک طاقتور ملک ہے۔ ایک طاقتور ایران خطے کے لیے فائدہ مند ہے اس لیے کہ ایران ایک ایسا ملک ہے جو گہری ثقافت کا حامل ہے اوریہ ہمیشہ ایک پرامن ملک رہا ہے۔ اگر امریکیوں نے شاہ کو مسلط نہ کیا ہوتا ایران اس سے کہیں زیادہ طاقتور ملک ہوتا۔

علی بلوسین کے قبولِ اسلام کی داستان

September 16, 2006 // 0 Comments

میرا نام علی بلوسین ہے۔ میں نے کمیونزم کے فلسفہ پر پی ایچ ڈی کی ہے۔ پولیٹیکل اسٹڈیز میں ڈپلوما کیا ہے۔ سوویت یونین کے زمانے میں فلسفہ کا استاد رہا۔ لیکن درحقیقت میں کمیونسٹ فکر سے مطمئن نہیں تھا۔ میرا خیال تھا کہ اس میں کوئی نہ کوئی خامی ضرور موجود ہے۔ اس دنیا کا ایک خالق ضرور ہونا چاہیے

امریکا اور اسرائیل تنہا کھڑے ہیں!

September 1, 2006 // 0 Comments

میں اپنی زندگی میں بہت ہی خوش قسمت رہا ہوں۔ جو کچھ میں نے کیا‘ اس کے نتیجے میں مجھے اور میری بیوی کو بے شمار مسرت و شادمانی میسر آئی۔ میں چار سال وائٹ ہاؤس میں رہا‘ یہ میری ناکامی نہیں تھی۔ کسی کے لیے امریکا کے صدر کی حیثیت سے کام کرنا کوئی سیاسی ناکامی تو نہیں۔ جب میں نے کاخِ سفید چھوڑا تو ہم نے اپنی زندگی کے بہترین دن گزارے۔

1 2