Abd Add
 

شمارہ یکم، 16 اپریل 2018

پندرہ روزہ معارف فیچر کراچی
جلد نمبر:11، شمارہ نمبر:7،8

دشمنوں کو قتل کرنے کے ’نئے طریقے‘

April 1, 2018 // 0 Comments

یورپ سے زیادہ یہ بات کون جانتا ہے کہ سیاسی بنیاد پر کیا جانے والا کوئی قتل عالمی جنگ بھی چھیڑ سکتا ہے۔ ۱۹۱۴ء میں سربیا کے ایک قوم پرست کے ہاتھوں آرک ڈیوک پر چلائی جانے والی گولی نے پہلی جنگِ عظیم کا باعث بننے کی ’’سعادت‘‘ حاصل کی اور اِسی جنگ کی کوکھ سے دوسری جنگ عظیم نے جنم لیا۔ ۱۸۸۱ء میں روس کے زار نکولس دوم پر پھینکے جانے والے بم نے اصلاحات کا عمل روک دیا۔ سیاسی قتل بڑے پیمانے پر خرابیاں پیدا کرنے کا باعث بنتے رہے ہیں۔ اس کی بھاری یا ہلکی قیمت ہر قوم کو چکانا پڑتی ہے۔ ۱۹۶۱ء میں کانگو کے وزیر اعظم پیٹرس لمومبا کے قتل نے ملک کو تباہی کے راستے پر ڈال دیا۔ اس [مزید پڑھیے]

امریکا سعودی عرب کی ایٹمی ہتھیار حاصل کرنے میں مدد کرے گا؟

April 1, 2018 // 0 Comments

مشرق وسطیٰ میں آخری چیز جس کی کسر باقی رہ گئی ہے وہ یہ ہے کہ ایک اور ملک جوہری ہتھیار بنانے کی صلاحیت حاصل کر لے اور یہ ممکن بھی ہے اگر امریکا سعودی عرب کے جوہری توانائی کے کاروبار میں شامل ہونے کی منصوبہ بندی سے غلط انداز میں نمٹے اور پچیس سال میں بجلی پیدا کرنے کے لیے۱۶ ؍ایٹمی ری ایکٹرز بھی لگا کر دے۔ سعودی یہ نہیں کہہ رہے ہیں کہ وہ بدترین عدم استحکام کا شکار اس خطے میں اسرائیل کے بعد ایٹمی ہتھیار رکھنے والا دوسرا ملک بننا چاہتے ہیں، بلکہ ان کا اصرار ہے کہ ری ایکٹرز کو صرف بجلی پیدا کرنے کے لیے استعمال کیا جائے گا، تاکہ وہ اپنے تیل کے ذخائر کو بیرون ملک فروخت [مزید پڑھیے]