معارف فیچر

۱۔ معارف فیچر ہر ماہ کی یکم اور سولہ تاریخوں کو شائع کیا جاتا ہے۔ اس میں دنیا بھر سے (ہمیں) دستیاب ایسی معلومات کا انتخاب پیش کیا جاتا ہے‘ جو اسلام سے دلچسپی اور ملت اسلامیہ کا درد رکھنے والوں کے غور و فکر کے لیے اہم یا مفید ہوسکتی ہیں۔

۲۔ پیش کیا جانے والا لوازمہ بالعموم بلاتبصرہ شائع کیا جاتا ہے۔ کسی مضمون‘ نقطہء نظر‘ خیال یا معلومات کے انتخاب کی وجہ اس سے ہمارا اتفاق نہیں‘ اس کی اہمیت ہوتی ہے۔ کسی مضمون یا معلومات کی مدلل تردید یا اس سے اختلاف پر مبنی لوازمہ کو بھی جگہ دی جاسکتی ہے۔

۳۔ فیچر کو بہتر بنانے کے لیے مفید معلومات کے حصول یا ان کے ذرائع تک رسائی میں آپ کی مدد کا خیرمقدم کیا جائے گا۔

۴۔ ہمارے فراہم کردہ لوازمے کے مزید‘ لیکن غیرتجارتی ابلاغ کی عام اجازت ہے۔

۵۔ معارف فیچر کی کوئی قیمت مقرر نہیں۔ تاہم عطیات کی ضرورت بھی رہتی ہے اور عطیات قبول بھی کیے جاتے ہیں۔

حکمرانی بذریعہ ’’سیاسی اسلام‘‘

September 16, 2017 // 0 Comments

کسی زمانے میں اخوان المسلمون کو اسلامی دنیا کی ایک انتہائی متحرک اور نتیجہ خیز تحریک کا درجہ حاصل تھا، مگر اب اس کی حالت یہ ہوگئی ہے کہ ایک رکن نے حال ہی میں اپنے ساتھیوں اور مجموعی طور پر تحریک کی حالت بیان کرنے کے لیے ’’مردہ، مرتے ہوئے یا زیر حراست‘‘ کے الفاظ استعمال کیے۔ جنوری ۲۰۱۱ء میں عرب دنیا میں عوامی بیداری کی لہر دوڑی، جس کے بعد اخوان نے مصر میں انتخابات میں کامیابی حاصل کی اور ۲۰۱۲ء میں وہ حکمران جماعت بن گئی۔ مگر جنرل عبدالفتاح السیسی کی قیادت میں فوج نے، عوام کے بھرپور تعاون سے، اخوان کو اقتدار سے نکال پھینکا۔ چار سال بعد اب جنرل السیسی مصر کے صدر ہیں اور انہوں نے اخوان کو ربع [مزید پڑھیے]

چین ۔ روس ’’دوستانہ تعلقات‘‘

September 1, 2017 // 0 Comments

اکیس جولائی،چین کے تین بحری جنگی جہازوں نے پہلی دفعہ بحیرہ بالٹک میں روس کے ساتھ مل کر جنگی مشقیں کیں۔دونوں ممالک امریکا کو یہ پیغام دینا چاہتے تھے کہ ہم مغربی تسلط کے مقابلے کے لیے متحد ہیں، اس کے دباؤ میں نہیں آئیں گے اور نہ ہی ہم نیٹو کے خلاف اپنی طاقت کا مظاہرہ کرنے سے ڈرتے ہیں۔ان جنگی مشقوں کا ایک اور مقصد دنیا کو یہ بتانا بھی تھا کہ چین اور روس کے دوستانہ تعلقات پہلے کے مقابلے میں اب زیادہ مضبوط ہیں(۱۹۶۰ ء سے ۱۹۸۰ ء تک یہ آپس میں جنگی حریف رہے ہیں)۔ اس طرح کے اتحاد کے مظاہرے گزشتہ ہفتوں میں کئی بارسامنے آئے ہیں۔ اس ماہ جرمنی میں ہونے والی جی۔۲۰ ممالک کی کانفرنس میں شرکت [مزید پڑھیے]

1 2 3 4 5 82