معارف فیچر

۱۔ معارف فیچر ہر ماہ کی یکم اور سولہ تاریخوں کو شائع کیا جاتا ہے۔ اس میں دنیا بھر سے (ہمیں) دستیاب ایسی معلومات کا انتخاب پیش کیا جاتا ہے‘ جو اسلام سے دلچسپی اور ملت اسلامیہ کا درد رکھنے والوں کے غور و فکر کے لیے اہم یا مفید ہوسکتی ہیں۔

۲۔ پیش کیا جانے والا لوازمہ بالعموم بلاتبصرہ شائع کیا جاتا ہے۔ کسی مضمون‘ نقطہء نظر‘ خیال یا معلومات کے انتخاب کی وجہ اس سے ہمارا اتفاق نہیں‘ اس کی اہمیت ہوتی ہے۔ کسی مضمون یا معلومات کی مدلل تردید یا اس سے اختلاف پر مبنی لوازمہ کو بھی جگہ دی جاسکتی ہے۔

۳۔ فیچر کو بہتر بنانے کے لیے مفید معلومات کے حصول یا ان کے ذرائع تک رسائی میں آپ کی مدد کا خیرمقدم کیا جائے گا۔

۴۔ ہمارے فراہم کردہ لوازمے کے مزید‘ لیکن غیرتجارتی ابلاغ کی عام اجازت ہے۔

۵۔ معارف فیچر کی کوئی قیمت مقرر نہیں۔ تاہم عطیات کی ضرورت بھی رہتی ہے اور عطیات قبول بھی کیے جاتے ہیں۔

خلیجی ممالک کے قطر سے ۱۳ مطالبات

July 1, 2017 // 0 Comments

نمبر۱۔ ایران سے سفارتی تعلقات کم کیے جائیں۔ایران کا قطر میں موجود سفارتی مشن بند کیا جائے۔ایرانی پاسداران انقلاب کے ارکان کو ملک بدر کیا جائے اور اس کے ساتھ فوجی اور خفیہ تعاون ختم کیا جائے۔ایران کے ساتھ تجارت امریکی اور عالمی پابندیوں کے مطابق کی جائے اورایسا کوئی تعاون نہ کیا جائے جس سے خلیجی ممالک کے مفادات کو کوئی نقصان پہنچے۔ ۲۔ قطر میں ترکی کے ساتھ فوجی تعاون فوری معطل کیا جائے اور زیر تعمیر ترک فوجی اڈے کو فوراً بند کیا جائے۔ ۳۔ تمام ’’دہشت گرد،فرقہ وارانہ اور نظریاتی‘‘تنظیموں سے تعلقات ختم کیے جائیں،خاص طور پر اخوان المسلمون، داعش، النصرہ فرنٹ اور حزب اللہ جیسی تنظیمیں ۔سرکاری طور پر ان تمام تنظیموں کو دہشت گرد قرار دیا جائے جیسا کہ [مزید پڑھیے]

شاہ سلمان اور ان کا خاندان

July 1, 2017 // 0 Comments

سعودی فرماں روا شاہ سلمان، جو جنوری ۲۰۱۵ء میں بادشاہت کے منصب پر فائز ہوئے، سات ’’سدیری‘‘ بھائیوں میں سے آخری ہیں جو اس منصب پر رہیں گے۔ اس وقت وہ قدامت پرست ریاست، جس کی آمدنی کا انحصار صرف تیل پر ہے، میں بڑے پیمانے پر اصلاحاتی پروگرام کی سربراہی کر رہے ہیں۔ اس اصلاحاتی پروگرام کے اصل روح رواں ۸۱ سالہ شاہ سلمان کے بیٹے محمد بن سلمان ہیں، جنھیں بدھ کو ولی عہد نامزد کیا گیا ہے۔ ۳۱ سالہ شہزادہ محمدبن سلمان ملک کی معیشت کو متنوع کرنے اور زیادہ سے زیادہ سعودیوں کو ملازمتیں فراہم کرنے کے لیے ترتیب دیے جانے والے اس پروگرام کے معمار ہیں۔ ان کی ولی عہد کے طور پر نامزدگی اس بات کی نشاندہی کرتی ہے [مزید پڑھیے]

ایران کے ’’آزاد خیالوں‘‘ کی فتح

June 16, 2017 // 1 Comment

جب آزاد دنیا کے رہنما عرب شہزادوں کے ساتھ تلوار لہراتے رقصاں تھے اور قدیم فارسی دشمن کی مذمت کررہے تھے تو خلیج کے دوسری طرف ایرانی ووٹر بے فکر رقص کررہے تھے، مردوں اور عورتوں سے سڑکیں بھری ہوئی تھیں اور جشن رات بھر جاری رہا، یہ لوگ صدر حسن روحانی کے دوبارہ منتخب ہونے کا جشن منا رہے تھے، وہ ایران کے مغرب سے تعلقات بہتر بنانے کے وژن پر اور سخت گیروں کے مقابلے میں کامیابی پر خوش تھے۔ ۱۹مئی کو حسن روحانی نے ۵۷ فیصد ووٹ حاصل کیے جبکہ مقابل ابراہیم رئیسی کو محض ۳۸ فیصد ووٹ ملے، اسی دن منعقد ہونے والے بلدیاتی انتخابات میں قدامت پسندوں کو تہران کی تمام ۲۱ نشستوں پر شکست کا سامنا کرنا پڑا، قدامت [مزید پڑھیے]

1 2 3 4 5 6 80