روبوٹ فینکس مریخ پر اتر گیا

امریکا کے خلائی ادارے ناسا (NASA) نے اطلاعات بھیجنے والا ایک روبوٹ مریخ کی سطح پر اتار دیا ہے۔ مریخ پر جانے والا یہ روبوٹ ’مارس فنکس لینڈر‘ زمین سے سرخ سیارے تک کا ۶۸ کروڑ کلو میٹر کا سفر طے کر کے مریخ کے شمالی حصے میں اتر گیا۔ مریخ پر اترنے والا یہ خلائی طیارہ ایک مشینی ہاتھ سے لیس ہے جو مریخ کی سطح کے اندر پانی یا برف کی موجودگی کا پتا چلائے گا۔

سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ اس مشن سے یہ واضح طور پر پتا چل سکے گا کہ آیا کبھی مریخ پر زندگی کے کوئی آثار موجود بھی رہے ہیں یا نہیں۔

فونکس لینڈر مریخ کی سطح پر پچیس مئی کو گرین وچ کے معیاری وقت کے مطابق گیارہ بج کر ۵۳ منٹ پر اتر گیا تھا۔ اس خلائی سیارے کے دس ماہ طویل سفر کے آخری سات منٹ انتہائی خطرناک ترین لمحے تھے۔ اکیس ہزار کلو میٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے مریخ کی فضا کے کنارے پر پہنچنے کے بعد اس خلائی سیارے نے حفاظت سے اترنے کے لیے کئی ایک پینترے بدلنا تھے۔

آخری مرحلے پر اس خلائی سیارے کا پیرا شوٹ کھلنا تھا تاکہ اس کی رفتار کم ہو سکے اور یہ بالکل محفوظ حالت میں مریخ کی سطح کو چھو سکے۔ اس طیارے کے فلائٹ کنٹرولر نے اعلان کیا کہ مریخ کے شمالی علاقے پر فونکس اتر گیا ہے۔ خوش آمدید!

(بحوالہ: ماہنامہ ’’طاہرہ‘‘ کراچی۔ شمارہ: جون ۲۰۰۸ء)

Leave a comment

Your email address will not be published.


*