Abd Add
 

اسامہ بن لادن

CIA چیف سے دس سوالات

July 1, 2005 // 0 Comments

پورٹر گوس صرف سات ماہ کے لیے اس وقت سی آئی اے ڈائریکٹر رہے تھے جب اس سی آئی اے کے جاسوس کو اپنا زیادہ تر اختیار امریکی نیشنل انٹیلی جینس کے نئے ڈائریکٹر John Negroponte کو سونپنا پڑا تھا۔ لیکن ۶۶ سالہ پورٹر گوس کا کہنا ہے کہ اب ان کے پاس امریکا کی سب سے بڑی خفیہ Human ایجنسی کو چلانے کا زیادہ موقع ہے۔ وہ اپنے اپنے انٹرویو کے لیے ’’ٹائم‘‘ کے نمائندے Timotly J. Burgoo کے ساتھ ہم کلام ہوئے: س: امریکا اسامہ کو تلاش کرنے میں کب کامیاب ہو گا؟ ج: اس سوال کی گہرائی اس سے کہیں زیادہ ہے جتنا کہ آپ واقف ہیں۔ اس تسلسل میں کہ آپ کو کامیابی کے ساتھ دہشت گردی کے خلاف جنگ کو [مزید پڑھیے]

الجزیرہ ٹی وی سے متعلق کچھ حقائق

May 16, 2005 // 0 Comments

الجزیرہ ٹی وی کے حوالے سے بعض سٹیلائٹ ٹی وی اور انٹر نیٹ ذرائع نے ایک تحقیقی رپورٹ شائع کی ہے۔ ان کے مطابق ان رپورٹوں میں الجزیرہ نیٹ ورک کے علاقائی و بین الاقوامی نیٹ ورک قطری حکومت کی ملکیت ہے۔ یہ پہلے بی بی سی عربی نشریات کی ملکیت تھا اور سعودی عربیہ اس کے اخراجات برداشت کرتا تھا۔ جب الجزیرہ نے ایک سعودی منحرف کا انٹرویو نشر کیا تو سعودی عرب نے اس پر اعتراض کیا لیکن بی بی سی نے اس طرح کے پروگرام کو روکنے سے انکار کر دیا۔ لہٰذا سعودی حکومت اس بات پر راضی ہو گئی کہ اس ٹی وی نیٹ ورک کو فروخت کر دیا جائے اور قطری شہزادہ (ولی عہد) نے اسے ۱۵ کروڑ ڈالر کے [مزید پڑھیے]

مغربی دانش اسلامی دانش کی بنیاد پر پروان چڑھی!

November 1, 2004 // 0 Comments

پروفیسر سید حسین نصر کا شمار سائنس‘ عرفان اور فلسفۂ اسلامی کے صف اول کے ماہرین میں ہوتا ہے۔ آپ جارج واشنگٹن یونیورسٹی میں اسلامیات کے پروفیسر ہیں۔ آپ ۱۹۳۳ء میں علماے دین کے ایک گھرانے میں پیدا ہوئے۔ ابتدائی تعلیم کے مراحل ایران اور امریکا میں طے کیے۔ اس کے بعد آپ نے ماساچوسٹ انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی (MIT) میں فزکس اور ہارورڈ یونیورسٹی میں جیالوجی اور جیوفزکس کے مضامین میں اپنی تعلیم جاری رکھی اور بالآخر موخرالذکر دانشگاہ سے History of Science & Philosphy میں پی ایچ ڈی کی ڈگری حاصل کی۔ سائنس اور اسلامک کاسمالوجی اس سلسلے میں آپ کی تحقیق کے خصوصی موضوع تھے۔ ڈاکٹر حسین نصر ۱۹۵۸ء سے ۱۹۷۹ء تک تہران یونیورسٹی میں تاریخِ علم و فلسفہ کے استاد رہے۔ [مزید پڑھیے]

امریکا اور اسرائیل حالات کو بد سے بدتر بنا رہے ہیں!

October 16, 2004 // 0 Comments

توقع کے عین مطابق ہر گزرے دن کے ساتھ عالمی اسٹیج پر ہونے والے ڈرامائی واقعات کی رفتار تیز ہوتی جارہی ہے اور لگتا ہے کہ امریکا کے صدارتی انتخابات سے قبل اگلے تین ہفتوں میں اس پردۂ زنگاری سے بہت کچھ نمودار ہونے والا ہے۔ ہو سکتا ہے اسامہ بن لادن پکڑ لیے جائیں تاکہ بش کی گرتی ہوئی ساکھ کو سہارا ملے یا اسرائیل ایران پر حملہ کر دے لیکن اس وقت جو کچھ ہو رہا ہے اس سے تو بش کے لیے حالات بد سے بدتر ہوتے دکھائی دے رہے ہیں۔ ایک طرف امریکی خفیہ ایجنسی سی آئی اے کی تازہ رپورٹ نے جارج بش اور ان کے حواریوں کو پوری دنیا کے سامنے ان کے اصل مکروہ حیثیت کو برہنہ کر [مزید پڑھیے]

1 2