Abd Add
 

اسرائیلی آرمی

اسرائیلی قید میں ۸۰ فیصد فلسطینی کم عمر ہیں!

February 16, 2005 // 0 Comments

بچے کسی بھی قوم اور ملک کا مستقبل ہوتے ہیں‘ یہی بچے آنے والے وقتوں میں اپنے ملک و قوم کی باگ ڈور سنبھالتے ہیں۔ عیسائیوں اور یہودیوں نے ایک طے شدہ منصوبے کے تحت فلسطینیوں کی نسل کشی کا منصوبہ بنایا اور فلسطینی بچوں کو موت کا نشانہ بنانا شروع کر دیا۔ جس میں اب تیزی آتی چلی جارہی ہے اس کا اندازہ یوں لگایا جاسکتا ہے کہ تحریکِ انتفاضہ کے ابتدائی ڈھائی سال کے دوران اسرائیلی فوجیوں نے ۲۳۰۰ سے زائد فلسطینیوں کو شہید کیا جس میں سب سے زیادہ تعداد بچوں کی ہے۔ خود اسرائیلی حکومت کا دعویٰ ہے کہ ان میں سے بہت سے فلسطینی بچوں کی شہادت اس وقت واقع ہوئی جب مسلح اسرائیلی فوجیوں نے تصادم کے دوران فائرنگ [مزید پڑھیے]