ایران

ایران کے توسیع پسندانہ عزائم اور اسرائیل

October 1, 2017 // 0 Comments

ستمبر کے آغاز میں مغربی شام کے قصبے مسیاف پر میزائل حملہ کیا گیا، شام میں سرگرم حکومتوں یا عسکری تنظیموں میں سے کسی نے بھی اس فضائی حملے کی ذمہ داری قبول نہیں کی، شاید اس کی ضرورت بھی نہیں تھی۔ کیونکہ حملے کا ہدف شامی حکومت اور حزب اللہ تھی۔ یہ کافی تھا اس بات کا یقین کرنے کے لیے کہ حملہ اسرائیل کی جانب سے کیاگیا ہے۔ یہودی ریاست طویل عرصے سے شام میں حزب اللہ کے ٹھکانوں پر فضائی حملے کررہی ہے، لیکن اس میں زیادہ تر حملے دمشق کے اطراف میں یا شام لبنان سرحد پر کیے گئے۔ اس بار حملہ کا ہدف اسرائیلی سرحد سے ۳۰۰ کلومیٹر دور اور روسی اینٹی ایئر میزائل بیس کے قریب تھا۔ اس حملے [مزید پڑھیے]

ایران کے صدارتی انتخابات کے چھ امیدوار

May 1, 2017 // 0 Comments

شوریٰ نگہبان نے چھ امیدواروں کو انتخابات میں حصہ لینے کی اجازت دی ہے۔یہ ادارہ امیدواروں کی اسلامی نظام کے ساتھ وفاداری جانچتا ہے۔اس بار صدر کے عہدے کے لیے ۱۶۳۶؍امیدواروں نے درخواست دی تھی۔ ۱۔حسن روحانی: صدر روحانی دوسری مرتبہ اس عہدے کے امیدوار ہیں۔ اپنا اندراج کرواتے ہوئے انھوں نے اپنی حکومت کے کئی ایک ’’مثبت اقدامات‘‘ کاذکر کیا۔اور تمام ایرانی مردوزن پر زور دیا کہ وہ ایک بار پھر ’’اسلام اور ایران‘‘کے لیے ووٹ دیں۔ ۲۔ابراہیم رئیسی: روحانی کے سب سے بڑے مشہور حریف چھپن سالہ عالم ابراہیم رئیسی ہیں،جو قائد انقلاب آیت اللہ خامنہ ای کے ایک قریبی ساتھی رہ چکے ہیں۔اور انھیں ان کا جانشین تصور کیا جاتا ہے۔رئیسی ’’قتل عام‘‘کے جج کے طور پر جانے جاتے ہیں۔وہ ۱۹۸۸ ء [مزید پڑھیے]

ایران کے جنرل سلیمانی کا عروج وزوال

September 16, 2015 // 0 Comments

ایران کے سب سے نمایاں فوجی افسر میجر جنرل قاسم سلیمانی کو اندرون ملک ایک عرصے سے عزت و احترام حاصل ہے مگر وہ کبھی منظر عام پر نہیں آئے تھے، یہاں تک کہ عراق کے محاذوں پر لی گئی ان کی تصاویر سماجی میڈیا پر آئیں جن میں وہ داعش کے جہادیوں کو بغداد سے پرے دھکیلنے والوں کی قیادت کرتے دکھائی دیے۔ ایرانی پاسدارانِ انقلاب کے بیرونی دھڑے قدس فورس کے ۵۸ سالہ کمانڈر پھر اس تیزی سے مقبول ہوئے کہ سال کے بہترین آدمی کا اعزاز اپنے نام کرلیا۔ جنرل سلیمانی کی تصاویر کو شروع میں نظر انداز کیا گیا مگر چونکہ ایران مشرقِ وسطیٰ میں اپنی دھاک بٹھانا چاہتا تھا، لہٰذا بعد ازاں ان تصاویر کو ریاستی اخبارات میں خوب جگہ [مزید پڑھیے]

اوباما کا مسئلۂ ایران

March 1, 2014 // 0 Comments

اس وقت براک اوباما کا سب سے بڑا مسئلہ یہ ہے کہ امریکا میں رائے عامہ ایران کے حوالے سے تقسیم ہوچکی ہے۔ حکومتی اور پارلیمانی حلقوں میں ایران پر بحث شدت اختیار کرگئی ہے۔ کانگریس میں اس حوالے سے واضح طور پر دو کیمپ دکھائی دے رہے ہیں۔ ایسا لگتا ہے کہ امریکی صدر کو ایران کے معاملے میں کانگریس سے زیادہ مدد نہیں مل سکے گی

1 2