تعلیم

غریب ترین بچے، اعلیٰ ترین تعلیم

October 16, 2016 // 0 Comments

اسکول کا مقصد پسماندہ علاقوں سے تعلق رکھنے والے بچوں کو بہترین تعلیم دینا ہے۔ بھارت کی ریاست اترپردیش میں ’’ودیاگیان لیڈرشپ اکیڈمی‘‘ غریب خاندان کے بچوں کو اعلیٰ تعلیم دلا رہی ہے۔ اس بورڈنگ اسکول کے معیار کا اندازہ اس بات سے لگایا جا سکتا ہے کہ یہاں ہر سال ۲۰۰ نشستوں کے لیے ڈھائی لاکھ سے زیادہ درخواستیں موصول ہوتی ہیں۔ یہ اسکول شِو نادر فاؤنڈیشن نے قائم کیا تھا، جو ایسی تعلیم مکمل طور پر مفت فراہم کرتا ہے جو عام طور پر صرف انتہائی امیر خاندان ہی برداشت کر سکتے ہیں۔ روشنی نادر ملہوترا فاؤنڈیشن کی ٹرسٹی ہیں۔ وہ کہتی ہیں کہ اسکول کا تصور بھارت کے ان نجی اسکولوں سے لیا گیا ہے، جن سے نکل [مزید پڑھیے]

‘‘کینیڈا کے مسلمان: ’’خواندگی، ہنرمندی اور تعلیم

August 1, 2014 // 0 Comments

ابوالحقائق نے اونٹاریو صوبائی اسمبلی سے پاس ہونے والے بل ۱۳، Accepting Education Act (گے لائف اسٹائل کی قبولیتِ عام کا ایکٹ)، اسکولوں میں قائم ہونے والے گے اسٹریٹ کلب (Gay-Straight Alliance Club) گے پریڈ ڈے اور ویک، پنک ڈے، دو ماں اور دو باپ کا تصور، بچوں میں کے جی کی سطح سے ریڈیکل سیکس ایجوکیشن جس میں درجنوں قسم کے جنسی افعال کی عملی تعلیم گریڈ ۳ سے، جس طرح کھول کر بیان کیا ہے،اسے پاور پوائنٹ پر سمجھایا اور سرکاری پالیسی کی وڈیو کے ذریعے بے نقاب کیا ہے اور یہ بتا دیا ہے کہ نئے ایکٹ کا مقصد دراصل تمہارے بچوں کو ہم جنس پرست اور جنسی حیوان (حالانکہ لفظ حیوان کا استعمال بھی یہاں حیوانوں کی توہین ہے کہ حیوان کبھی فطرت سے ہٹا ہوا جنسی فعل نہیں کرتا) بنانا ہے

ملک میں تعلیمی مراکز کی کل تعداد

February 1, 2007 // 0 Comments

نیشنل ایجوکیشن سینسس (NEC-2005) کے مطابق پاکستان میں تعلیم کے زمرے میں آنے والے تمام اداروں کی تعداد ۲۴۵۶۸۲ ہے۔ ان اداروں میں ۱۶۴۵۷۹ (۶۷%) کا تعلق پبلک سیکٹر سے ہے جبکہ ۸۱۱۰۳ (۳۳%) کا تعلق پرائیویٹ سیکٹر سے ہے۔ سروے جس کا اہتمام وزارتِ تعلیم، اکیڈمی آف ایجوکیسنل پلاننگ اینڈ مینجمنٹ (AEPAM) اور فیڈرل بیورو آف اسٹیٹسٹکس (FBS) نے مل کر کیا تھا

امریکا میں پاکستانی طلبہ کی تعداد میں اضافہ!

September 1, 2006 // 0 Comments

سنجیدہ طلبہ جنہوں نے امریکی یونیورسٹی کے انتخاب کے حوالے سے ہوم ورک انجام دیا ہے اور جنہوں نے ویزہ کی درخواست گزاری کے ضوابط کی اچھی طرح پابندی کی ہے‘ وہ ہمارے سفارت خانہ کی ویب سائٹ پر جاسکتے ہیں اور انہیں بجا طور سے ویزہ ملنے کی توقع کرنی چاہیے۔ امریکا میں پاکستانیوں کے حصولِ تعلیم کی حوصلہ افزائی کے لیے ہماری دونوں حکومتوں نے حال ہی میں Pakistan-US Student Fullbright Program میں اضافہ کر دیا ہے۔