عرب اسرائیل

مسلم دنیا اور ’’نا اہلی‘‘ کا بحران

October 1, 2014 // 0 Comments

مسلم دنیا زوال کی حدوں کو چھو رہی ہے۔ ایسا لگتا ہے جیسے اب کبھی بھرپور اعتماد کا لمحہ نہیں آئے گا اور سب کچھ اِسی طور چلتا رہے گا۔ مگر کیا واقعی ایسا ہے کہ مسلمان اس وقت اپنی تاریخ کے بدترین انحطاط سے دوچار ہیں؟ کیا اِس سے بُرے لمحات بھی مسلم امہ پر وارد ہوئے ہیں؟ کیا بغداد پر ہلاکو خان کے حملے کو آج کے لمحے سے زیادہ خطرناک اور شدید زوال قرار دیا جاسکتا ہے؟

اسرائیل کے خلاف مزاحمت ختم کرنے کا منصوبہ

August 1, 2014 // 0 Comments

قاہرہ میں سیاسیات کے پروفیسر عبداللہ العشال کا کہنا ہے کہ مصر نے حال ہی میں عرب وزرائے خارجہ کے فورم پر غزہ میں جس جنگ بندی کی تجویز پیش کی ہے، اس کا بنیادی مقصد فلسطینیوں کو غیر مسلح کرکے ان کی طرف سے اسرائیلی مظالم کی راہ مکمل طور پر مسدود کرنا ہے۔ القدس پریس کو انٹرویو دیتے ہوئے عبداللہ العشال نے کہا کہ عرب وزرائے خارجہ نے جنگ بندی کی جو تجویز پیش کی ہے اس کے نتیجے میں اسرائیلی مظالم کے خلاف عرب دنیا کی مزاحمت بڑھنے کے بجائے غیر معمولی حد تک کم ہوجائے گی اور اسرائیلی مظالم کے سامنے بند باندھنے کی کوئی صورت نہ رہے گی

عرب اسرائیل مخمصہ

March 1, 2014 // 0 Comments

ہارش (Harish) شاید اسرائیل کا پہلا شہر ہے جسے اس خیال ہی سے آباد کیا گیا کہ اس میں یہودی اور عرب مل کر رہیں گے۔ بحیرۂ روم کے ساحل کو مغربی کنارے سے الگ کرنے والی پہاڑیوں کے دامن میں بڑے بلڈوزر مٹی اور ملبہ ہٹانے میں مصروف ہیں تاکہ ساٹھ ہزار افراد کے لیے بہتر رہائشی سہولتیں ممکن بنائی جاسکیں۔ عربوں نے اس شہر کے لیے ایک الٹرا آرتھوڈوکس یہودی میئر کے انتخاب میں مدد دی ہے۔

اسرائیل میں انتخابات سے دلبرداشتہ عرب ووٹر

January 16, 2013 // 0 Comments

اسرائیل میں آباد عرب باشندے آنے والے انتخابات سے اس قدر دل برداشتہ اور ناامید ہیں کہ وہ تو شاید پولنگ میں حصہ لینے کے موڈ میں بھی نہیں۔ ایک نظر ڈالیے تو ایسا لگتا ہے کہ جو کچھ بھی ہو رہا ہے اس کا کوئی نتیجہ (یا مثبت نتیجہ) برآمد نہیں ہونے والا۔ ہر اسرائیلی انتخابات میں لاکھوں عرب باشندے اس امید پر ووٹ ڈالتے ہیں کہ شاید ان کے مسائل حل ہو جائیں مگر ان کی امیدیں ہر بار بے ثمر ثابت ہوئی ہیں۔ اسرائیل میں عرب نسل کے باشندوں کی تعداد بیس فیصد ہے مگر ان میں اور یہودیوں میں معاشی اور معاشرتی فرق بڑھتا جارہا ہے۔ عرب پارٹیاں ان قوانین کی دیوار گرانے میں ناکام رہی ہیں جو ان کی راہ [مزید پڑھیے]

اسرائیلی عرب بھی غربِ اردن کے فلسطینیوں کی طرف دیکھنے لگے!

March 1, 2012 // 0 Comments

اسرائیل میں عرب باشندوں کی اکثریت والے شہر نزارتھ نے حال ہی میں غربِ اردن میں حکومت کے مرکز رام اللہ سے معاہدہ کیا جس کے تحت دونوں شہروں کو جڑواں قرار دیا گیا ہے۔ رام اللہ نے کئی ممالک کے شہروں کے ساتھ دوستی اور مفاہمت کے معاہدے کیے ہیں