Abd Add
 

چین

اسلحہ کی عالمی تجارت میں چین کا نمایاں کردار

June 1, 2018 // 0 Comments

دہائیوں کی معاشی ترقی اور فوج کو جدید ہتھیاروں سے آراستہ کرنے کے بعد اب چین ہتھیاروں کی عالمی تجارت میں ایک اہم کردار بن چکا ہے۔گزشتہ کئی سالوں تک چین اپنے برآمد شدہ ہتھیاروں سے کئی گنا زیادہ روایتی ہتھیار درآمد کرتا رہا، لیکن ۲۰۱۳ء کے بعد سے چین کی ہتھیاروں کی برآمدات اس کی درآمدات سے بڑھ چکی ہیں۔۲۰۰۸ء سے ۲۰۱۷ء کے درمیان چین نے دنیا بھر میں۴ء۱۴ ؍ارب ڈالر کے روایتی ہتھیار برآمد کیے۔جس کی وجہ سے یہ امریکا،روس،فرانس اور جرمنی کے بعداسلحہ برآمد کرنے والا دنیا کا پانچواں بڑاملک بن چکا ہے۔ اسٹاک ہوم انٹرنیشنل پیس ریسرچ انسٹیٹیوٹ کے مطابق چین کی روایتی ہتھیاروں کی فروخت ۲۰۰۸ء میں ۶۵۰ ملین ڈالر سے بڑھ کر ۲۰۱۷ء میں ۱۳ء۱ ؍ارب ڈالر تک پہنچ [مزید پڑھیے]

چینی سڑک نیپال تک پہنچ گئی تو بھارت کیا کرے گا؟

May 1, 2018 // 0 Comments

بھارت کے ہمسایہ ملک نیپال کے نئے وزیر خارجہ پردیپ کمار جوالی نے بیجنگ میں چینی وزیر خارجہ وانگ یی سے ملاقات کی۔ اس ملاقات میں دونوں ملکوں کے درمیان ریل رابطوں کو بہتر بنانے سمیت کئی اہم مسائل پر بات ہوئی۔ گزشتہ سال نیپال میں اس سلسلے میں تمام فیصلے کیے جاچکے تھے لیکن کے پی اولی عبوری وزیراعظم تھے اس لیے ان فیصلوں پر عمل درآمد نہیں کیا جا سکا، اب نیپال میں اقتدار تبدیل ہو گیا تھا۔ اولی کے اقتدار میں واپس آنے کے بعد دوبارہ ملاقات کر کے اس فیصلے پر عمل درآمد پر بات کی گئی۔ دنیا بھر میں اپنی پہنچ بڑھانے کے لیے چین نے ایشیا، یورپ اور افریقا کے ۶۵ ممالک کو شامل کرنے کی منصوبہ بندی کی [مزید پڑھیے]

عالمی طاقتوں کے مابین تصادم

March 16, 2018 // 0 Comments

گزشتہ ۷۰ سالوں میں بین الریاستی جنگوں میں غیر معمولی کمی آنے کے باوجود خارجہ پالیسی کے تجزیہ نگاروں کا کہنا ہے کہ اب دنیا ایک ایسی دہائی میں داخل ہو رہی ہے جہاں یہ جنگیں ممکنات میں شامل ہوں گی۔ علاقائی جنگوں کی وجہ تو چند بدمعاش ریاستیں ہو سکتی ہیں، جیسا کہ ایران اور شمالی کوریا، لیکن عالمی طاقتوں کے درمیان جنگوں کے امکانات ابھی بھی کم ہی ہیں۔ چین، روس اور امریکا کے درمیان مقابلے کی فضا نہ صرف عالمی امن کے لیے خطرے کی علامت ہے بلکہ اس کی عسکری سمت بھی ہے۔ اس رپورٹ میں کوریائی جزیرے پر جنگ کے خطرے (جس کی شدت آج کل زیادہ ہے) پر غور کرنے کے بجائے ان نکات پر غور کیا گیا ہے، [مزید پڑھیے]

1 2 3 6