Abd Add
 

چین

ہانگ کانگ: کمیونسٹ پارٹی اور عوام، مدمقابل

November 1, 2014 // 0 Comments

ہانگ کانگ کی احتجاجی تحریک،جسے چھتریوں والے انقلاب کا نام دیا جارہا ہے،اس وقت شروع ہوئی جب اگست کے آخر میں چین نے فیصلہ کیا کہ ہانگ کانگ کے لیے چیف ایگزیکٹو کا انتخاب کمیونسٹ پارٹی کے حامیوں پرمشتمل ایک کمیٹی کرے گی۔مظاہرین کا موقف ہے کہ ہانگ کانگ میں حقیقی جمہوریت کا وعدہ پورا کیا جائے، جو حکمراں کمیونسٹ جماعت نے ۱۹۹۷ء میں برطانیہ سے ہانگ کانگ کے حصول کے وقت کیا تھا۔

جنوبی ایشیا میں چین کی پیش قدمی!

October 1, 2014 // 0 Comments

مالدیپ کے بعد شی جن پنگ سری لنکا گئے۔ وہاں ان کا شاندار خیرمقدم کیا گیا۔ ۱۶ ستمبر کو کولمبو میں اسکول کے ہزاروں طلبا و طالبات نے سڑک کے کنارے کھڑے ہوکر چینی صدر کو خوش آمدید کہا۔ چینی صدر کے استقبال کی تیاریوں کے وقت یہ بات ملحوظ رکھی گئی تھی کہ ہاتھی اُن کا پسندیدہ جانور ہے، اِس لیے ۴۰ ہاتھیوں کو سجاکر سڑکوں پر لایا گیا تھا۔

شی جن پنگ چین کے نئے صدر منتخب

March 16, 2013 // 0 Comments

چین کی پارلیمان نے ۵۹ سالہ شی جن پنگ (Xi Jin Ping) کو دس سال کے لیے نیا چینی صدر منتخب کرلیا ہے۔ شی جن پنگ نے ۴ ماہ قبل کمیونسٹ پارٹی کا عہدہ سنبھالا تھا۔ چین کے عوامی ’’کورونوس گریٹ ہال‘‘ میں ۳۰۰۰ افراد نے اپنا حقِ رائے دہی استعمال کیا۔ یہ لوگ سرخ رنگ کا بیلٹ پیپر، سرخ رنگ کے جھنڈے کے سامنے رکھے سرخ بیلٹ باکس میں ڈال رہے تھے۔ نتائج غیر یقینی نہیں تھے، یعنی شی جن پنگ نے ۲۹۵۲ ووٹ حاصل کیے، صرف ایک ووٹ ہی مخالفت میں ڈالا گیا۔ اس طرح نتائج کی شرح ۸۶ء۹۹ فیصد تھی۔ لی ین شان (Liu Yunshan) جو پارلیمان کے اجلاس کی صدارت کر رہے تھے، نے شی جن پنگ کی صدارت کا اعلان [مزید پڑھیے]

چین میں خاندانی منصوبہ بندی کی پالیسی پر نظرثانی

November 16, 2012 // 0 Comments

دی کرسچین سائنس مانیٹر (۲ نومبر ۲۰۱۲ئ) کی ایک رپورٹ کے مطابق چین میں خاندانی منصوبہ بندی کے تحت برسوں پہلے اختیار کی جانے والی ’ایک ہی بچہ بس‘ کی پالیسی پر نظرثانی کی آوازیں اٹھنے لگی ہیں۔ چین کے پالیسی ساز اس پر نہایت سنجیدگی سے غور کر رہے ہیں اور سرکاری رجحان ساز ادارے (تھنک ٹینکس) حکومت کو یہ مشورہ دے رہے ہیں اُس کو اب اس پالیسی کی حمایت و سرپرستی سے ہاتھ کھینچ لینا چاہیے۔ اس ادارے کی طرف سے یہ تجویز پیش کی گئی ہے کہ حکومت کو اس معاملے میں اب نرمی سے کام لینا شروع کر دینا چاہیے، انہیں اس کا احساس ہے کہ یکبارگی اسے ختم کرنا تو مشکل ہے لیکن اس سے پہلوتہی یا اسے نظرانداز [مزید پڑھیے]

بحیرۂ جنوبی چین کا تنازع

March 16, 2012 // 0 Comments

پہلی جنگ عظیم میں جرمنی میدان جنگ بنا تھا۔ کئی ممالک کی افواج نے جرمن سرزمین پر اپنا ہنر آزمایا اور پھر یہ لڑائی کئی ملکوں پر پھیلی۔ یہی حال بحیرہ جنوبی چین کا بھی ہے۔ اس خطے میں کئی ممالک کے مفادات ایک دوسرے سے متصادم ہو رہے ہیں۔ سمندری حدود کے تنازعے سے لے کر سمندر کی تہہ میں موجود تیل اور گیس کے ذخائر پر ملکیت کے دعوے تک کئی ممالک بظاہر جنگ لڑنے تک پہنچ چکے ہیں۔

واحد اور تنہا

August 1, 2011 // 0 Comments

چین کے سب سے زیادہ آبادی والے صوبے نے فی گھرانا ایک بچے کی سرکاری پالیسی پر شدید نکتہ چینی کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس کے نتیجے میں آبادی کا توازن بگڑ رہا ہے۔ ایک طرف تو شرح پیدائش کم ہو رہی ہے اور کام کرنے والوں کی کمی واقعی ہو رہی ہے اور دوسری طرف معمر افراد کی تعداد میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے جس سے معیشت پر دباؤ میں بھی اضافہ ہو رہا ہے۔ چین میں فی گھرانا ایک بچے کی پالیسی ایک نسل قبل نافذ کی گئی تھی اور تب سے اب تک اس پر تنقید کی جاتی رہی ہے۔ اب تک یہ تنقید علمی سطح پر ماہرین کے بیانات تک محدود رہی ہے مگر اب سرکاری اور عوامی [مزید پڑھیے]

1 2 3 4 5 6