Abd Add
 

فرانس

’ کباب فوبیا ‘۔۔ فرانس میں نیا سیاسی ہتھیار!

January 1, 2015 // 1 Comment

فرانس میں سیاسی میدان میں دائیں بازو کے متعصب سیاست دانوں اور لبرل حلقوں کے درمیان ملکی سیاست کے حوالے سے دیگر متضاد آرا کے ساتھ مشرقی کھانوں بالخصوص ’’کباب‘‘ کی بڑھتی مقبولیت پر بھی سخت اختلافات ہیں اور کباب سیاسی محاذ کو گرم کرنے کا موجب بنا ہوا ہے۔

فرانسیسی زبان اور فرانس کے معاشی مفادات

September 1, 2014 // 0 Comments

جیکوس اٹالی نے اپنی رپورٹ رواں ماہ فرانس کے صدر کو پیش کردی ہے، جس کے پیش لفظ میں انہوں نے اس خدشے کا اظہار کیا ہے کہ اگر فرانسیسی زبان کے تحفظ کے لیے بروقت اقدامات نہ کیے گئے تو دنیا بھر میں فرانسیسی بولنے والے افراد کی تعداد میں آئندہ چند عشروں کے دوران میں نمایاں کمی آسکتی ہے۔

ڈاکٹر محمد یونس اور گرامِن بنک کا ایشو

April 16, 2011 // 0 Comments

بنگلہ دیش میں ڈاکٹر محمد یونس کا ایشو ایک دفعہ پھر زور پکڑ گیا۔ ۵؍اپریل کو جب بنگلہ دیش سپریم کورٹ کے سات رکنی فل بنچ نے چیف جسٹس اے بی ایم خیرالحق کی سربراہی میں ڈاکٹر محمد یونس کی درخواست مسترد کر دی تو اس فیصلے پر بنگلہ دیش کے اندر اور باہر سخت ردعمل سامنے آیا۔ اٹارنی جنرل محبوب عالم نے سپریم کورٹ کے فیصلے کے فوراً بعد کہا کہ اب ڈاکٹر محمد یونس کا اپنے آفس میں بیٹھنا سراسر غیر قانونی ہوگا۔ ۲مارچ کو بنگلہ دیش بنک (اسٹیٹ بنک) نے ڈاکٹر محمد یونس کو گرامِن بنک کے منیجنگ ڈائریکٹر کے عہدے سے برطرف کر دیا تھا۔ دوسرے دن ڈاکٹر محمد یونس نے ہائی کورٹ میں اس کے خلاف پٹیشن دائر کردی۔ جس [مزید پڑھیے]

حجاب پر پابندی فرانس کو مہنگی پڑے گی!

September 16, 2010 // 0 Comments

فرانس اور بیلجیم نے اسلامی حجاب پر پابندی عائد کرنے کا فیصلہ تو کرلیا تاہم اب انہیں اس کا خمیازہ بھی بھگتنا پڑ رہا ہے۔ فرانسیسی حکومت اور پارلیمنٹ نے حجاب پر پابندی کے معاملے کو بہت حد تک انا کا مسئلہ بنالیا جس کے باعث موقف ترک کرنا اس کے لیے شدید مشکلات پیدا کرسکتا ہے۔ فرانس کی سینیٹ ماہ رواں کے دوران حجاب پر مکمل پابندی کے حق میں ووٹ دینے والی ہے۔ قومی اسمبلی اس بل کو پہلے ہی منظور کرچکی ہے۔ سینیٹ سے منظوری کے بعد اس بل کو قانون کی شکل میں نافذ کرنا ہوگا۔ فرانس کی سیاحت کی صنعت کے لیے یہ موت کا پیغام ہوسکتا ہے۔ جب سے فرانس میں پردے پر پابندی کا معاملہ چلا ہے تب [مزید پڑھیے]

فرانس: شرح پیدائش

October 16, 2005 // 0 Comments

فرانس میں اوسطاً ایک خاتون پر بچوں کی تعداد ۹ء۱ ہے۔ جبکہ تیزی سے کم ہوتی ہوئی آبادی پر قابو پانے کے لیے ضروری ہے کہ

شمسی توانائی کے استعمال میں اضافہ

August 16, 2005 // 0 Comments

فرانس میں شمسی توانائی سے چلنے والی پہلی کار کی تیاری کے جملہ حقوق ۱۸۶۱ء میں محفوظ کیے گئے تھے۔ اس وقت سے اب تک سائنسدانوں کا یہ خواب رہا ہے کہ سورج کی روشنی اور حرارت کو توانائی میں تبدیل کیا جائے۔ آج کے دور میں ایجادات‘ سرمایہ کاری اور تحقیق و ترقی سے شمسی توانائی کی ایسی ٹیکنالوجی تیار کرنے میں مدد ملی ہے جس سے بجلی پیدا کی جاسکتی ہے اور بجلی کی پیداوار کے بنیادی ڈھانچے پر دبائو کم کرنے میں مدد مل سکتی ہے۔ شمسی توانائی کی تین اہم ٹیکنالوجیز میں سولر تھرمل‘ شمسی توانائی کا ارتکاز اور فوٹو وولٹک شامل ہیں۔ سولر تھرمل آلات کے ذریعے سورج کی حرارت براہِ راست حاصل کر کے اسے سوئمنگ پولز کو گرم [مزید پڑھیے]

قرآن کی بے حرمتی

June 1, 2005 // 0 Comments

گوانتا ناموبے جیل میں امریکی فوجیوں کے ہاتھوں قرآن مجید اور اسلامی مقدسات کی بے حرمتی اور توہین کے خلاف افغانستان میں گذشتہ دنوں احتجاجی مظاہروں کا سلسلہ جاری رہا اور اطلاعات کے مطابق ان مظاہروں کو طاقت کے زور پر روکنے کی کوشش کی گئی‘ جس کے دوران درجنوں افراد جاں بحق اور زخمی ہوئے۔ اس سلسلے میں جمعہ کے روز بھی پورے افغانستان میں نماز کے بعد امریکی فوجیوں کے ہاتھوں قرآن کی بے حرمتی کے خلاف وسیع پیمانے پر مظاہرے کیے گئے‘ جن میں مظاہرین نے امریکا کے خلاف نعرے لگائے اور قرآن کریم کی بے حرمتی کے ذمہ دار امریکی فوجیوں کو قرار واقعی سزا دینے کا مطالبہ کیا۔ افغانستان میں امریکا مخالف مظاہروں کا سلسلہ دس مئی کو اس وقت [مزید پڑھیے]

1 2