Abd Add
 

بھارت چین تعلقات

بھارت خوف کا شکار کیوں؟

July 1, 2019 // 0 Comments

بھارت عالمی تجارت میں ایک بڑا شراکت دار ضرور ہے لیکن اسے بھی چین جیسی بڑی طاقت سے گھیراؤ کے خطرات لاحق ہیں۔ چین کے ’’بیلٹ اینڈ روڈ منصوبے‘‘ میں بھارت کے پانچ پڑوسی ممالک پاکستان، بنگلادیش، سری لنکا، نیپال اور مالدیپ شامل ہیں۔ بھارت کو تشویش ہے کہ اس منصوبے سے اس کے پڑوسی ممالک میں چین کا اثر و رسوخ حد سے زیادہ بڑھ جائے گا اور نئی بننے والی بندرگاہیں اور سڑکیں چین کو عسکری معاونت بھی فراہم کر سکتی ہیں۔اس وجہ سے بھارت جنوبی ایشیا میں چین سے ایک قدم آگے رہنے کے لیے کوششیں کر رہا ہے۔اب تک بھارت نے سرمایہ کاری کے ذریعے ان ممالک میں اپنا اثر ورسوخ بڑھانے کی کوشش کی ہے۔ان کوششوں میں بھارت کو کچھ [مزید پڑھیے]

چین، بھارت بنتے بگڑتے تعلقات

January 16, 2011 // 0 Comments

چین کے وزیر اعظم وین جیا باؤ بھارت کا دورہ کرنے والے ہیں۔ ایسے میں چین کے حوالے سے بھارت کا رویہ سخت تر ہوتا جارہا ہے۔ ذرا ان معاملات پر غور کیجیے جن میں بھارت کا رویہ سخت رہا ہے۔ دونوں ممالک ایک طویل مدت سے کشیدہ تعلقات کے حامل ہیں۔ دونوں ایک دوسرے کو شک کی نظر سے دیکھتے آئے ہیں۔ دونوں ممالک کے درمیان سرحدی تنازع غیر معمولی نوعیت کا حامل رہا ہے۔ فرق صرف یہ ہے کہ اب بھارت کی حکومت چین کے سامنے معذرت خواہانہ رویہ اختیار کرنے کے بجائے خم ٹھونک کر میدان میں نکل آئی ہے۔ من موہن سنگھ کے بارے میں عام تاثر یہ ہے کہ وہ بیشتر معاملات میں خاصے نرم خو ہیں۔ اب تک کی [مزید پڑھیے]

پاکستان اور بھارت سے چین کے تعلقات کی بدلتی نوعیت

January 16, 2011 // 0 Comments

چین کے وزیر اعظم وین جیا باؤ نے گزشتہ ماہ پاکستان اور بھارت کا دورہ کیا۔ دونوں ممالک میں ان کے دورے کی نوعیت تقریباً یکساں تھی۔ انہوں نے تعلقات بہتر بنانے اور خطے میں حقیقی استحکام پیدا کرنے کے حوالے سے مختلف معاہدے کیے۔ چین کے وزیر اعظم نے بھارت کو تجارتی حوالے سے اور پاکستان کو اسٹریٹجک معاملات میں غیر معمولی اہمیت دی اور اس عزم کا اعادہ کیا کہ دوستی کی روش پر گامزن رہا جائے گا۔ وین جیا باؤ کے دورے پر ایک چینی دانشور اور ایک بھارتی صحافی نے جو کچھ محسوس کیا ہے وہ ہم آپ کی خدمات میں پیش کر رہے ہیں۔ فو ژیاؤ کیانگ: وزیراعظم وین جیا باؤ نے حال ہی میں بھارت اور پاکستان کا دورہ [مزید پڑھیے]