Abd Add
 

جموں و کشمیر

’’بھارتی تسلط سے آزادی کا یقین دلاتا ہوں!‘‘

February 16, 2010 // 0 Comments

سید علی گیلانی اپنی ذات میں خود ایک تحریک ہیں۔ بھارتی ظلم و ستم کے سامنے عظمت و استقامت کے اس پہاڑ کی زندگی کا بیشتر حصہ جیل میں گزرا۔ اپنے مقصد سے سچے لگائو اور اس کے لیے مثالی جدوجہد کے اعتراف میں بھارتی فوج نے انہیں ’’ضمیر کا قیدی‘‘ کا خطاب دیا۔ سید علی گیلانی ۲۹ ستمبر ۱۹۲۹ء کو زورمنگ‘ بانڈی پور میں پیدا ہوئے۔ ابتدائی تعلیم سوپور میں حاصل کی‘ گریجویشن اورینٹل کالج لاہور سے کی۔ لاہور کی گلیوں سے ان کو آج بھی خصوصی لگائو ہے۔ ان کے دو بیٹے اور پانچ بیٹیاں ہیں۔ آپ مجاہد ہونے کے ساتھ ساتھ علم و ادب سے شغف رکھنے والی شخصیت بھی ہیں۔ آپ کی ۳۰ سے زائد تصانیف ہیں‘ آپ آج کل کُل [مزید پڑھیے]

حقِ خود ارادی کے بغیر مسئلۂ کشمیر حل نہیں ہو سکتا!

July 16, 2005 // 0 Comments

جناب وید بھسین جموں سے شائع ہونے والے انگریزی روزنامہ ’’کشمیر ٹائمز‘‘ کے چیف ایڈیٹر اور ممتاز دانشور ہیں۔ وہ گذشتہ پچاس سال سے صحافت کر رہے ہیں۔ انہوں نے اپنا پہلا اردو اخبار ’’نیا سماج‘‘ کے نام سے ۱۹۵۲ء میں نکالا تھا لیکن ۱۹۵۴ء میں بھارتی حکومت نے شیخ محمد عبداﷲ کی حمایت کرنے پر اس اخبار کو بند کر دیا۔ وید بھسین اخبار کی بندش کے بعد نئی دہلی چلے گئے‘ جہاں سے انہوں نے کشمیر ٹائمز کے نام سے ایک ہندی اخبار کا اجرا کیا لیکن ریاست جموں و کشمیر میں اس اخبار کی سرکولیشن ایک مسئلہ بن گئی۔ چنانچہ اس اخبار کو بھی بند کرنا پڑا بعد ازاں بھسین صاحب نے ۱۹۵۵ء میں جموں سے انگریزی روزنامہ ’’کشمیر ٹائمز‘‘ کا اجرا [مزید پڑھیے]

1 2