مراکش

مراکش: انتخابات کے راستے سیاسی تبدیلی

October 16, 2016 // 0 Comments

مغربی ذرائع ابلاغ کی فراہم کردہ اطلاعات کے مطابق شمالی افریقا کے ایک اہم ملک مراکش میں ۶ اکتوبر ۲۰۱۶ء کو جو پارلیمانی انتخابات ہوئے تھے، اس میں حکمراں جسٹس اینڈ ڈیولپمنٹ پارٹی (پی جے ڈی) کو ایک بار پھر کامیابی ملی ہے۔ دستوری اصلاحات کے بعد ۲۰۱۱ء میں ہوئے پہلے پارلیمانی انتخابات کی طرح اس بار بھی جسٹس اینڈ ڈیولپمنٹ پارٹی سب سے بڑی جماعت بن کر ابھری ہے، حالانکہ اس بار اسے پچھلی مرتبہ کے مقابلے میں زیادہ نشستیں حاصل ہوئی ہیں، تاہم وہ تنہا حکومت بنانے کی حالت میں نہیں۔ لہٰذا اسے اس مرتبہ بھی مخلوط حکومت ہی بنانی پڑے گی۔ بعض سیاسی تجزیہ کاروں کا یہ کہنا ہے کہ مراکش کا موجودہ سیاسی نظام اس طرح وضع کیا گیا ہے کہ [مزید پڑھیے]

مراکش: بلدیاتی انتخابات میں حکمراں جماعت کامیاب

September 16, 2015 // 0 Comments

مراکش میں سیاسی استحکام کی وہ سطح نہیں رہی، جو ہوا کرتی تھی اور جس کے ذریعے بہتر انداز سے آگے بڑھنا ممکن تھا۔ بلدیاتی انتخابات کو حکمراں جماعت کی مقبولیت کے لیے ایک بڑی آزمائش کے روپ میں دیکھا جارہا تھا۔ بادشاہت ختم کرنے اور جمہوری اصلاحات نافذ کرنے کے لیے چلائی جانے والی ملک گیر تحریک کے نتیجے میں موجودہ حکومت کو قائم ہونے کا موقع ملا تھا۔ پی جے ڈی سے عوام کو کسی بھی دوسرے معاملے سے زیادہ اس بات کی توقع رہی ہے کہ وہ ملک کو زیادہ سے زیادہ جمہوریت کی طرف لے جانے میں اپنا کردار عمدگی سے ادا کرے گی۔ بلدیاتی انتخابات کو عوام نے جمہوریت کی طرف لے جانے والے ایک اہم راستے کے طور پر [مزید پڑھیے]