Abd Add
 

اخوان المسلمون

مصر: اِخوان المسلمون کامیابی کی طرف گامزن

December 1, 2011 // 0 Comments

آمر حسنی مبارک کے خلاف کامیاب انقلاب کے بعد مصر میں ہونے والے پہلے پارلیمانی انتخابات کے پہلے مرحلے میں اخوان المسلمون نے واضح سبقت حاصل کرلی۔ نتائج کے مطابق فریڈم اینڈ جسٹس پارٹی (اخوان المسلمون کاسیاسی ونگ) نے اب تک ۴۷ فیصد ووٹ حاصل کیے ہیں اور وہ پہلے نمبر پر ہے، جبکہ دوسرے نمبر پر سلفی جماعت کی النور تحریک ہے۔ اس طرح اسلامی جماعتوں نے انتخابات کے پہلے مرحلے میں واضح برتری حاصل کر لی ہے۔ سیکولر جماعتوں کے اتحاد نے ۲۲ فیصد ووٹ حاصل کیے ہیں۔ ایک مصری صحافی نے لکھا ہے کہ اخوان کی کامیابی کی وجہ وسیع فلاحی خدمات ہیں، جیتنا نہیں، ہارنا حیرت انگیز ہوتا۔ پیر اور منگل کو پہلے مرحلے میں قاہرہ، اسکندریہ سمیت بعض دیگر علاقوں [مزید پڑھیے]

شام میں ’’منظم اپوزیشن‘‘ تیار!

November 1, 2011 // 0 Comments

شام میں اپوزیشن جماعتوں کا ایک محاذ تیزی سے ابھر رہا ہے۔ چھ ماہ قبل بشارالاسد انتظامیہ کے خلاف تحریک کے آغاز سے اب تک ملک کے اندر اور باہر حکومت کے مخالفین کو متحد اور منظم کرنے کے لیے مضبوط اپوزیشن کو سامنے لانے کی کوششیں کی جاتی رہی ہیں۔ ۲؍ اکتوبر کو ترکی میں جس سیرین نیشنل کونسل کے قیام کا اعلان کیا گیا ہے وہ اب تک بنائے جانے والے اپوزیشن محاذ میں سب سے زیادہ طاقتور دکھائی دیتی ہے۔ ۱۵ ستمبر کو جس کونسل کے قیام کا اعلان کیا گیا تھا اس کا یہ وسیع ورژن ہے۔ اس میں سیرین ٹرانزیشنل کونسل کے سربراہ اور ساربون کے پروفیسر برہان غالیون سمیت کئی اہم شخصیات شامل ہیں۔ اس بات کا قوی امکان [مزید پڑھیے]

اسلام اور جمہوریت

September 1, 2011 // 0 Comments

لبنان کے دارالحکومت بیروت میں ایک خاتون نے انگریزی، عربی اور فرانسیسی کے ملغوبے سے تیار کردہ زبان میں بتایا کہ آج کل یہ لوگ بہت اچھی باتیں کر رہے ہیں مگر ان کی باتوں پر بھروسہ نہیں کیا جاسکتا۔ مصر، تیونس، لیبیا، مراکش رام اللہ (غزہ) میں بیداری کی جو لہر اٹھی ہے اور جس طور آمروں کی حکومتیں ختم ہو رہی ہیں اس کے تناظر میں ان ممالک کے سیکولر اور لبرل حلقوں میں اسلامی تحاریک کے بارے میں طرح طرح کے انتباہی کلمات عوام کی زبان سے سننے کو ملتے ہیں۔ اسلامی تحاریک کے قائدین اور ترجمان اور مرکزی دھارے کی تنظیموں مثلاً اخوان المسلمون کی جانب سے یہ یقین دہانی کرائی جارہی ہے کہ اقتدار میں آکر وہ حقیقی امن کے [مزید پڑھیے]

الاخوان المسلمون اور مصری انقلاب

May 16, 2011 // 0 Comments

الاخوان المسلمون کے بعض نمایاں قائدین کے ساتھ قاہرہ میں گفت و شنید کے ذریعے یہ جاننے کی کوشش کی گئی ہے کہ مصر کے موجودہ انقلاب میں اخوان کا حقیقی کردار کیا رہا ہے اور آئندہ مرحلے کے لیے ان کا خاص نقطۂ نظر کیا ہوگا؟ اس گفتگو میں ’’ڈاکٹر عصام العریان‘‘ اخوان کے گائڈنس آفس کے ذمہ دار ’’انجینئر سعدالحسینی‘‘ اور ’’ڈاکٹر محمد البلتاجی‘‘ جو ایک نمایاں قائد اور مصری انقلاب کونسل کے ممتاز رکن ہیں۔ ان کے علاوہ قاہرہ یونیورسٹی میں سیاسیات کی لیکچرار ہبہ رئوف نے بھی حصہ لیا۔ الاخوان المسلمون کے نمایاں قائدین پُرزور انداز میں کہتے ہیں: آئندہ مرحلہ ’’مال غنیمت‘‘ کی تقسیم کے لیے نہیں ہے بلکہ ملک کی ترقی میں بھرپور حصہ لینا ہم سب کی مشترکہ [مزید پڑھیے]

1 4 5 6 7