Abd Add
 

میانمار

جنوب مشرقی ایشیامیں چین کا بڑھتا اثر و رسوخ

March 1, 2020 // 0 Comments

شمالی لاؤس کے ایک دور افتادہ حصے میں بانس کا جنگل کرینوں کو راہ دے رہا ہے۔ جنگل میں ایک شہر بسایا جارہا ہے۔ ریسٹورنٹس، مساج پارلر اور دوسری بہت سی تعمیرات کی جارہی ہیں۔ لاؤس، میانمار اور تھائی لینڈ کے سنگم پر واقع ہونے کی بنیاد پر اس علاقے کو گولڈن ٹرائنگل اسپیشل اکنامک زون کہا جارہا ہے۔ اس علاقے کو جدید ترین انداز کا دکھانے کے لیے یہاں شاندار ہوٹل بھی ہیں، بھرپور چمک دمک والے جوئے خانے بھی ہیں۔ اِسی بنیاد پر اِسے ’’لاؤس ویگاس‘‘ بھی کہا جارہا ہے، تاہم لاؤس کے عام شہریوں کا اس علاقے سے کوئی تعلق نہیں۔ جنگل میں آباد کیے جانے والے اس شہر میں چینی کرنسی یوآن چلتی ہے یا تھائی لینڈ کی بھات۔ لاؤس کی [مزید پڑھیے]

میانمار میں پہلا منتخب سویلین صدر

April 4, 2016 // 0 Comments

پچاس سال بعد میانمار (برما) کے پہلے منتخب سویلین صدر ’ہیٹن کیاو‘ نے اپنے عہدے کا حلف اٹھا لیا ہے۔ میانمار کی سیاسی جماعت نیشنل لیگ فار ڈیموکریسی (این ڈی ایل) کے رہنما ہیٹن کیاو نے صدر تھین سین کی جگہ صدارت کا عہدہ سنبھالا ہے۔ تھین سین نے اپنے گزشتہ پانچ سالہ دور حکومت میں وسیع پیمانے پر سیاسی اصلاحات متعارف کروائی تھیں۔ گزشتہ سال نومبر میں ہونے والے انتخابات میں این ڈی ایل کی بھاری اکثریت کے ساتھ فتح کے بعد اب قیادت کی منتقلی کا عمل مکمل ہوجائے گا۔ ان انتخابات کو ملک کے تاریخی اور سب سے شفاف انتخابات سمجھاجاتا ہے۔ جس میں این ڈی ایل نے اکثریتی جماعت کی حیثیت حاصل کر لی ہے۔ دوسری جانب عسکری ادارے پارلیمان میں [مزید پڑھیے]

آمریت سے جمہوریت کا سفر

December 16, 2015 // 0 Comments

میانمار (برما) ایک زمانے سے آمریت کے شکنجے میں چلا آرہا ہے۔ ملک کی جمہوری قوتیں اب تک اپنے آپ کو پوری طرح منوانے میں کامیاب نہیں ہوسکی ہیں۔ میانمار میں آمریت کی راہ ترک کرکے جمہوریت کی شاہراہ پر گامزن ہونے کا عمل انتہائی پیچیدہ اور خطرناک ہے۔ معمولی سی غلطی ملک کو دوبارہ آمریت کی طرف دھکیل سکتی ہے۔ میانمار میں پولنگ کے تمام مراحل مکمل ہوچکے ہیں۔ اپوزیشن لیڈر آنگ سانگ سوچی کی پارٹی نیشنل لیگ فار ڈیموکریسی نے ۸ نومبر سے شروع ہونے والے انتخابات میں مجموعی طور پر ۷۷ فیصد نشستیں حاصل کی ہیں جبکہ حکمراں فوجی قیادت کی حمایت یافتہ یونین سالیڈیریٹی اینڈ ڈیویلپمنٹ پارٹی نے شرمناک حد تک معمولی کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے صرف ۱۰ فیصد نشستیں [مزید پڑھیے]

مسلم قائدین کی دو روزہ عالمی کانفرنس

October 1, 2013 // 0 Comments

لاہور میں ۲۵ ،۲۶ ستمبر ۲۰۱۳ء کو اسلامی تحریکوں کی عالمی کانفرنس منعقد ہوئی۔ اُمت مسلمہ اور انسانیت کو درپیش سنگین بحرانوں کا جائزہ لینے، ان کے بارے میں ایک متفق علیہ مؤقف اور اُمت مسلمہ کے لیے عملی نقشۂ کار تجویز کرنے کے لیے کانفرنس میں ۲۰ ممالک کے چالیس سے زائد رہنمائوں نے شرکت کی۔ مراکش سے ملائیشیا تک اسلامی تحاریک کے ان اہم سیاسی اور فکری رہنمائوں کی پاکستان آمد بحیثیت قوم ہمارے لیے باعث اعزاز ہے۔ یہ رہنما افراد نہیں، کروڑوں انسانوں کے نمائندہ اور ترجمان ہیں۔ کئی ممالک کے عوام نے متعدد بار ان پر اپنے بھرپور اعتماد کا اظہار کیاہے، اور اللہ کی توفیق سے ان سب رہنمائوں اور ان کی تحریکات کادامن ہر طرح کی لوٹ مار اور [مزید پڑھیے]

ایٹمی ٹیکنالوجی کے معاملے میں منافقت

July 16, 2010 // 0 Comments

ایٹمی ٹیکنالوجی کی بات چلے تو ساری توجہ شمالی کوریا اور ایران پر مرکوز ہو جایا کرتی ہے۔ شمالی کوریا نے ایٹمی عدم پھیلاؤ کے معاہدے (این پی ٹی) سے علیٰحدگی اختیار کی اور دو ایٹمی تجربات کرلیے۔ ایران کا معاملہ یہ ہے کہ وہ ایٹمی ہتھیار بنانے کے پروگرام سے انکار کرتا ہے مگر سچ یہ ہے کہ وہ اس راہ پر گامزن ہے۔ شام اور میانمار (برما) بھی ایٹمی ہتھیاروں کے حصول کے خواہش مند دکھائی دیتے ہیں۔ اور انہیں ممکنہ طور پر شمالی کوریا ایٹمی ہتھیار فراہم کرے گا۔ اسرائیل بھی دباؤ میں ہے۔ اس سے کہا جارہا ہے کہ ایٹمی عدم پھیلاؤ کے معاہدے میں شریک ہو جائے۔ اس حوالے سے اس پر مصر کی جانب سے دباؤ بڑھایا جارہا ہے۔ [مزید پڑھیے]