Abd Add
 

پروٹسٹنٹ

پروٹسٹنٹ (Protestantism) عیسائیت کا ایک بڑا فرقہ ہے۔پروٹسٹنٹ عیسائیت کا ترقی پزیر فرقہ ہے

عدم رواداری کے لیے رواداری

July 1, 2012 // 0 Comments

انڈونیشیا میں مذہبی بنیاد پر تشدد کو فروغ مل رہا ہے۔ مئی کے دوران کئی مقامات پر مسلمانوں اور عیسائیوں کے درمیان جھڑپیں ہوئیں۔ پروٹیسٹنٹ عیسائیوں کی چند مذہبی رسوم کے دوران مسلمانوں نے گرجا گھروں پر حملے کیے۔ اس کے جواب میں بھی حملے کیے گئے۔ دارالحکومت جکارتہ کے نواح میں بھی ایک چرچ پر حملہ کیا گیا۔ بہت سے عیسائیوں نے شکایت کی ہے کہ انہیں قتل کی دھمکیاں بھی دی گئیں۔ شمالی سماٹرا میں بنیاد پرست مسلمانوںکی اکثریت والے صوبے آچے میں ۱۶؍گرجا گھر اجازت نامہ نہ ملنے کے باعث بند کردیے گئے ہیں۔ انڈونیشیا میں مذہب کے نام پر ڈرانے دھمکانے اور تشدد کا نشانہ بنانے کا سلسلہ جاری ہے مگر اس کے خلاف کوئی بھی اقدام نہیں کیا جارہا۔ ۲۶ [مزید پڑھیے]

مشرقی افریقا میں عیسائیت کی لہر

August 1, 2010 // 0 Comments

ہارن آف افریقا میں عیسائی بنیاد پرستی کا تیز رفتار فروغ ایک نئے دور کو جنم دے رہا ہے۔ اب تک حکومتیں متاثر نہیں ہوئیں تاہم عوامی سطح پر نیو چرچ موومنٹ کی پذیرائی کی جارہی ہے۔ گزشتہ ماہ ایک اتوار کی سہ پہر پارلیمنٹ کی رکن اور عیسائی مبلغہ مس وینجیرو نے ایک جلسے سے خطاب کے بعد کاغذ کا تھیلا چندہ جمع کرنے کے لیے نکالا۔ مس وینجیرو نے جلسے کے ہزاروں شرکا پر زور دیا کہ وہ آئندہ ماہ ہونے والے ریفرینڈم میں حکومت کی تجاویز کو مسترد کردیں۔ ۴؍ اگست کے مجوزہ ریفرینڈم میں دو ایسے نکات ہیں جو عیسائیوں کو کسی طور پسند نہیں۔ پہلا یہ کہ مسلم عدالتوں کو طلاق کے فیصلے کرنے کا اختیار دے دیا جائے اور [مزید پڑھیے]

صلیبی دہشت کا ایک خوفناک دن

September 1, 2006 // 0 Comments

اگست کی یہ تاریخ ہر سال یہی منظر پیش کر رہی ہے اور قیامت تک پیش کرتی رہے گی۔ آپ شاید محسوس نہ کرتے ہوں گے لیکن آیئے مختصراً اس داستان کو سن لیجیے۔ ممکن ہے کہ اس کے بعد میری طرح اس تاریخ کا یہ سوگوار منظر آپ کے دل میں بھی ہمیشہ کے لیے منقوش ہو جائے۔

میں مسلمان کیوں ہوا۔۔۔؟

September 1, 2005 // 0 Comments

عرصہ دراز سے مختلف ممالک کے لوگ بڑی تعداد میں سعودی عرب آرہے ہیں تاکہ یہاں کام کر کے کچھ سرمایہ جمع کر لیں اور اپنی معاشی زندگی بہتر بنا سکیں۔ اس لحاظ سے یہ ملک نہ صرف مسلمانوں کے لیے بلکہ غیرمسلموں کے لیے بھی پرکشش ہے۔ صالح ایچان بھی اسی وجہ سے فلپائن سے سعودی عرب آئے، ان کا پیدائشی نام جوپال ایچان تھا۔ سعودی عرب میں قیام کے دوران انہیں مختلف تہذیبی اور معاشرتی مسائل سے دوچار ہونا پڑا، جن سے نمٹنے کے لیے انہیں بے حد جدوجہد کرنی پڑی۔ ان کی فراست، محنت اور اخلاص سے عجیب و غریب نتائج سامنے آئے، جو کہ ان کے خواب و خیال میں بھی نہ تھے۔ ان کی دلچسپ کہانی ہر بنی نوع انسان [مزید پڑھیے]