Abd Add
 

قطر

ترکی، سوڈان اور قطر کے بڑھتے تعلقات

March 16, 2018 // 0 Comments

حالات اور واقعات یہ بتا رہے ہیں کہ سوڈان اپنا نقطہ نظر تبدیل کرتے ہوئے ترکی اور قطر کے ساتھ اتحاد میں شامل ہوجائے گا، مستقبل میں سیاسی ہم آہنگی کے لیے اس اتحاد میں ایران کی شمولیت بھی ممکن ہے۔ عربوں کے استحکام کے لیے دوحہ سوڈان کے ساتھ اتحاد کی کوششیں کررہا ہے، اس کی کوششوں سے ہی ترکی، قطر اور سوڈان ایک دوسرے کے قریب آئے ہیں اور اس سے تہران کو بھی ایک مثبت پیغام ملاہے۔ اسی مقصد کے تحت رجب طیب ایردوان نے۲۴ سے ۲۷ دسمبر ۱۵۰ تاجروں کے ایک وفد کے ہمراہ سوڈان، چاڈ اور تیونس کا دورہ کیا۔ اس دورے کے مقاصد میں تجارتی اور اقتصادی تعاون کے ساتھ ساتھ عربوں کا ایک نیا اتحاد اور عرب دنیا [مزید پڑھیے]

خلیجی ممالک کے قطر سے ۱۳ مطالبات

July 1, 2017 // 0 Comments

نمبر۱۔ ایران سے سفارتی تعلقات کم کیے جائیں۔ایران کا قطر میں موجود سفارتی مشن بند کیا جائے۔ایرانی پاسداران انقلاب کے ارکان کو ملک بدر کیا جائے اور اس کے ساتھ فوجی اور خفیہ تعاون ختم کیا جائے۔ایران کے ساتھ تجارت امریکی اور عالمی پابندیوں کے مطابق کی جائے اورایسا کوئی تعاون نہ کیا جائے جس سے خلیجی ممالک کے مفادات کو کوئی نقصان پہنچے۔ ۲۔ قطر میں ترکی کے ساتھ فوجی تعاون فوری معطل کیا جائے اور زیر تعمیر ترک فوجی اڈے کو فوراً بند کیا جائے۔ ۳۔ تمام ’’دہشت گرد،فرقہ وارانہ اور نظریاتی‘‘تنظیموں سے تعلقات ختم کیے جائیں،خاص طور پر اخوان المسلمون، داعش، النصرہ فرنٹ اور حزب اللہ جیسی تنظیمیں ۔سرکاری طور پر ان تمام تنظیموں کو دہشت گرد قرار دیا جائے جیسا کہ [مزید پڑھیے]

قطر کی نئی حکومت

October 1, 2013 // 0 Comments

قطر کے نئے امیر چاہتے ہیں کہ اندرونی سطح پر نظم و ضبط برقرار رہے اور بیرون ملک خطرناک اقدامات سے گریز کیا جائے۔ شیخ حماد بن خلیفہ الثانی کی جانب سے اقتدار اپنے بیٹے تمیم کے سپرد کیے ہوئے ابھی دو ماہ ہی گزرے ہیں کہ دوہا میں موڈ تیزی سے بدلتا دکھائی دے رہا ہے۔ غور سے دیکھا جائے تو نئے امیر کی سربراہی میں بھی قطر کی حکومت معاملات کو جوں کا توں رکھنے ہی پر توجہ دے گی۔ تاہم سیاسی زبان میں، نئے سرے سے توازن پیدا کرنے، نظم کو برقرار رکھنے اور ارتکاز کی ضرورت پائی جاتی ہے، جیسے الفاظ نمایاں ہیں۔ اس سے اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ نئے امیر اندرون اور بیرون ملک کس نوعیت کی تبدیلی چاہتے [مزید پڑھیے]

قطر کی جمہوریت؟۔۔۔ دوسروں کے لیے!

June 16, 2013 // 0 Comments

قطر خطے میں سب سے بڑی مالیاتی حقیقت اور اصلاحات کا علمبردار بن کر ابھرا ہے مگر قطریوں کو اُس وقت خفت کا سامنا ہوسکتا ہے، جب کوئی پوچھے کہ تمہارے اپنے ملک میں جمہوریت کیوں نہیں ہے؟ جبکہ تمہارے قائدین دیگر ممالک میں سیاسی اصلاحات اور بالخصوص جمہوریت پر زور دیتے رہتے ہیں۔ قطر میں صرف سیاسی جماعتوں ہی پر نہیں بلکہ مظاہروں، مزدور انجمنوں اور عوامی امور کی نگرانی کرنے والی غیر سرکاری تنظیموں پر بھی پابندی عائد ہے۔ مجلس شوریٰ نے اعلان کیا تھا کہ انتخابات ۲۰۰۴ء میں ہوں گے۔ پھر یہ ہوا کہ معاملات ٹلتے رہے۔ شاید قطر میں کوئی ایک بھی نہیں جو یہ مشورہ دے کہ مجلسِ شوریٰ کے پاس قانون سازی کا اختیار بھی ہونا چاہیے۔ قطر سے [مزید پڑھیے]

الجزیرہ امریکا کے لیے۔۔

January 16, 2013 // 0 Comments

قطر کے عربی اور انگریزی زبان کے چینل الجزیرہ نے خبروں کو منفرد انداز سے کور کرنے کے معاملے میں اپنی صلاحیتوں کا لوہا عمدگی سے منوایا ہے۔ چینل پر مختلف حلقوں کی طرف سے تنقید بھی کی جاتی رہی ہے اور چینل کی انتظامیہ اور ایڈیٹوریل ٹیم نے اس تنقید کا بھرپور جواب بھی دیا ہے۔ اب یہ چینل امریکی ناظرین کی توجہ پانے کے لیے بھی بے تاب ہے۔ مصر کے تحریر اسکوائر میں جب لاکھوں افراد جمع ہوئے اور حکومت کا دھڑن تختہ کرنے کی ٹھان لی تو الجزیرہ نے عوام کا بھرپور ساتھ دیا۔ اس پر تنقید بھی ہوئی۔ جہاں جہاں بھی عوام حکومت کے خلاف کھڑے ہوئے ہیں، الجزیرہ نے بر وقت کوریج کا حق ادا کرنے کی کوشش کی [مزید پڑھیے]

1 2