Abd Add
 

سعودی عرب امریکہ تعلقات

امریکا سعودی عرب کی ایٹمی ہتھیار حاصل کرنے میں مدد کرے گا؟

April 1, 2018 // 0 Comments

مشرق وسطیٰ میں آخری چیز جس کی کسر باقی رہ گئی ہے وہ یہ ہے کہ ایک اور ملک جوہری ہتھیار بنانے کی صلاحیت حاصل کر لے اور یہ ممکن بھی ہے اگر امریکا سعودی عرب کے جوہری توانائی کے کاروبار میں شامل ہونے کی منصوبہ بندی سے غلط انداز میں نمٹے اور پچیس سال میں بجلی پیدا کرنے کے لیے۱۶ ؍ایٹمی ری ایکٹرز بھی لگا کر دے۔ سعودی یہ نہیں کہہ رہے ہیں کہ وہ بدترین عدم استحکام کا شکار اس خطے میں اسرائیل کے بعد ایٹمی ہتھیار رکھنے والا دوسرا ملک بننا چاہتے ہیں، بلکہ ان کا اصرار ہے کہ ری ایکٹرز کو صرف بجلی پیدا کرنے کے لیے استعمال کیا جائے گا، تاکہ وہ اپنے تیل کے ذخائر کو بیرون ملک فروخت [مزید پڑھیے]

سعودی خارجہ پالیسی جارحیت کی راہ پر

November 1, 2013 // 0 Comments

سفارت کاری کے میدان میں سعودی عرب سے کسی بھی نوع کی تیزی کی توقع نہیں رکھی جاتی مگر ۱۸؍اکتوبر کو سعودی حکومت نے سفارتی معاملات میں جس انداز کا flip-flop کیا، وہ بہت حد تک حیرت انگیز تھا۔ اس دن صبح اقوام متحدہ میں سعودی سفیر عبداللہ المعلمی نے بتایا کہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں دو سال کے لیے سعودی عرب کا غیر دائمی رکن کی حیثیت سے انتخاب ملک کی تاریخ میں ایک اہم موڑ ہے۔ سلامتی کونسل میں پہلی بار غیر دائمی رکن کی حیثیت سے منتخب ہونا سعودی عرب کے لیے غیر معمولی اہمیت کا حامل موقع تھا۔ اس پر سعودی جتنی بھی خوشی مناتے، کم تھی۔ مگر پھر چند ہی گھنٹوں کے اندر دارالحکومت ریاض سے پیغام آیا [مزید پڑھیے]