Abd Add
 

سوڈان

سوڈان (عربی: السودان) براعظم افریقہ کا ایک اسلامی ملک ہے۔

ترکی، سوڈان اور قطر کے بڑھتے تعلقات

March 16, 2018 // 0 Comments

حالات اور واقعات یہ بتا رہے ہیں کہ سوڈان اپنا نقطہ نظر تبدیل کرتے ہوئے ترکی اور قطر کے ساتھ اتحاد میں شامل ہوجائے گا، مستقبل میں سیاسی ہم آہنگی کے لیے اس اتحاد میں ایران کی شمولیت بھی ممکن ہے۔ عربوں کے استحکام کے لیے دوحہ سوڈان کے ساتھ اتحاد کی کوششیں کررہا ہے، اس کی کوششوں سے ہی ترکی، قطر اور سوڈان ایک دوسرے کے قریب آئے ہیں اور اس سے تہران کو بھی ایک مثبت پیغام ملاہے۔ اسی مقصد کے تحت رجب طیب ایردوان نے۲۴ سے ۲۷ دسمبر ۱۵۰ تاجروں کے ایک وفد کے ہمراہ سوڈان، چاڈ اور تیونس کا دورہ کیا۔ اس دورے کے مقاصد میں تجارتی اور اقتصادی تعاون کے ساتھ ساتھ عربوں کا ایک نیا اتحاد اور عرب دنیا [مزید پڑھیے]

سوڈان کے صدر عمر البشیر کی روہنگیا مسلمانوں کو کھلی دعوت

April 4, 2016 // 0 Comments

صدر عمر البشیر نے میانمار میں بدھوں کے ظلم و ستم کا نشانہ بننے والے روہنگیا مسلمانوں کو سوڈان میں رہائش اختیار کرنے کی دعوت دیتے ہوئے کہا کہ ’’ہم روہنگیا مسلمانوں کو اپنے ملک میں قبول کرنے پر خوشی محسوس کریں گے‘‘۔ انہوں نے قتل عام اور انسانی حقوق کی پامالی کے شکار روہنگیا مسلمانوں کو فضائی، زمینی اور سمندری راستے سے ملک میں داخلے کی اجازت دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ واضح رہے کہ سوڈان کے دارالحکومت خرطوم میں واقع شہید جامع مسجد کے امام نے گزشتہ جمعہ کے خطبے میں ’’گلوبل روہنگیا مرکز‘‘ کے سربراہ عبداللہ معروف کو روہنگیا مسلمانوں کے ملک میں داخلے اور انہیں سرکاری اجازت نامے کی دستاویزات دینے سے متعلق سوڈان کے صدر عمر البشیر کے تیاریاں شروع [مزید پڑھیے]

سوڈان: نقد، امداد اور سفارت کاری

May 1, 2013 // 0 Comments

کیا سوڈانیوں، اور بالخصوصی دارفر کے رہنے والوں، کو ایک نیا امن معاہدہ مل سکے گا؟ ملک میں آزادی کے ماحول کو تقویت پہنچانے کے عزم کا اظہار کرتے ہوئے سوڈان کے صدر عمر البشیر نے یکم اپریل کو اعلان کیا کہ تمام سیاسی قیدی رہا کر دیے جائیں گے۔ سات سرکردہ سیاسی کارکن فوری طور پر رہا کر بھی دیے گئے۔ عمر البشیر کی کابینہ کے ارکان نے قطر میں منعقدہ کانفرنس میں شرکت کی جس میں دارفر کی ترقی اور استحکام کے لیے امداد کا اعلان کیا گیا ہے۔ دارفر میں بڑے پیمانے پر کریک ڈاؤن اور قتل عام سے صدر عمر البشیر کے لیے مشکلات بڑھی ہیں۔ انٹر نیشنل کرمنل کورٹ نے ان پر فردِ جرم عائد کرتے ہوئے گرفتاری کے وارنٹ [مزید پڑھیے]

سوڈان کو تقسیم کرنے کی تیاری

December 16, 2010 // 0 Comments

سوڈان کے جنوب میں ابھرنے والی شورش اب رنگ لارہی ہے۔ امریکا اور یورپ نے مل کر سوڈان پر دباؤ ڈالا ہے کہ وہ جنوبی صوبے دارفر کے مکینوں کو آزادی دے۔ ۹؍جنوری کو ریفرنڈم ہونے والا ہے جس کے ذریعے یہ طے ہونا ہے کہ جنوبی سوڈان ملک کا حصہ رہے یا نہیں۔ مبصرین کا خیال ہے کہ جنوبی سوڈان کے لوگوں کی اکثریت سوڈان سے علیٰحدگی کے حق میں ووٹ دے گی۔ سوڈان کے صدر عمر البشیر نے وعدہ کیا ہے کہ وہ ریفرنڈم کے نتیجے کو خلوص دل سے قبول کریں گے اور اس کے مطابق عمل کریں گے۔ مگر مبصرین کو خدشہ ہے کہ عمر البشیر ایسے طریقے ضرور اختیار کریں گے جن کا مقصد تیل کی دولت سے مالا مال [مزید پڑھیے]

اور اب سوڈان تقسیم کی راہ پر

October 16, 2006 // 0 Comments

ایک رپورٹ کے مطابق امریکی صدر جارج ڈبلیو بش نے اقوام متحدہ سے مطالبہ کیا ہے کہ سوڈان کے دارفور علاقہ میں جو بڑے پیمانے پر بدامنی پھیلی ہوئی ہے اور وہاں کے باشندوں پر سوڈانی حکومت جس طرح مظالم ڈھارہی ہے اسے روکنے کے لیے اسے موثر قدم اٹھانا چاہیے‘ انہو ں نے وہاں امن فوج تعینات کرنے پر بھی زور دیا ہے