Abd Add
 

امریکی فوجی

کابل کے ساتھ تعلقات کی نوعیت

October 1, 2005 // 0 Comments

جبکہ عالمی توجہات کا نقطہ ارتکاز اب بھی دہشت گردی ہے امریکا واضح طور سے افغانستان میں پارلیمانی انتخابات کی کامیاب تکمیل پر تکیہ کئے ہوئے ہے جسے ۱۸ ستمبر کو منعقد ہونا ہے۔ بھارتی وزیراعظم من موہن سنگھ نے ۲۹۔۲۸ اگست کو افغانستان کا دو روزہ دورہ کیا۔ ۳۰ سالوں میں ہندوستان کے کسی سربراہ مملکت کا یہ پہلا دورہ تھا۔ بہرحال افغانستان کی صورت اب بھی مستحکم نہیں ہے۔ ۲۰۰۵ء کے آغاز سے ہی امریکی سپاہیوں کی ہلاکتوں میں اضافہ ہونے لگا ہے۔ القاعدہ کی قیادت ہنوز پاکستان افغان سرحد سے متصل پہاڑوں میں روپوش ہے قبائلی علاقوں میں ۷ ہزار سے زائد افواج کی تعیناتی کے باوجود پاکستان پر یہ وقتاً فوقتاً الزما عائد کیا جاتا ہے کہ وہ طالبان کے خلاف [مزید پڑھیے]

ناجائز ادویہ

August 1, 2005 // 0 Comments

اقوامِ متحدہ کی ایک رپورٹ: ٭ اقوامِ متحدہ کی ایک نئی رپورٹ کے مطابق پوری دنیا میں ۱۵ سال سے ۶۴ سال تک کے ۲۰ کروڑ لوگ جنہوں نے دنیا بھر میں گذشتہ ۱۲ ماہ میں ناجائز ادویات کا استعمال کیا ہے‘ کی تعداد قبل کے سال کے مقابلے میں ۸ فیصد زیادہ ہے۔ ٭ عالمی خوردہ منڈی میں ناجائز ادویات کی مالیت ۳۲۲ بلین ڈالر کے برابر ہے جو کہ دنیا بھر کے ۸۸ فیصد ممالک کے کے جی ڈی پی سے زیادہ ہے۔ ٭ طالبان کے ذریعہ چی نوک (Chinook) ہیلی کاپٹر کو نشانہ بنائے جانے کے سبب ۱۶ امریکی فوجی گذشتہ ہفتہ ہلاک ہو گئے۔ اکتوبر ۲۰۰۱ء میں جب اتحادی افواج نے افغانستان پر حملہ کیا تھا تو اس کے بعد سے [مزید پڑھیے]

قرآن کی بے حرمتی

June 1, 2005 // 0 Comments

گوانتا ناموبے جیل میں امریکی فوجیوں کے ہاتھوں قرآن مجید اور اسلامی مقدسات کی بے حرمتی اور توہین کے خلاف افغانستان میں گذشتہ دنوں احتجاجی مظاہروں کا سلسلہ جاری رہا اور اطلاعات کے مطابق ان مظاہروں کو طاقت کے زور پر روکنے کی کوشش کی گئی‘ جس کے دوران درجنوں افراد جاں بحق اور زخمی ہوئے۔ اس سلسلے میں جمعہ کے روز بھی پورے افغانستان میں نماز کے بعد امریکی فوجیوں کے ہاتھوں قرآن کی بے حرمتی کے خلاف وسیع پیمانے پر مظاہرے کیے گئے‘ جن میں مظاہرین نے امریکا کے خلاف نعرے لگائے اور قرآن کریم کی بے حرمتی کے ذمہ دار امریکی فوجیوں کو قرار واقعی سزا دینے کا مطالبہ کیا۔ افغانستان میں امریکا مخالف مظاہروں کا سلسلہ دس مئی کو اس وقت [مزید پڑھیے]

عراق میں مزید امریکی فوج بھیجی جائے گی!

December 16, 2004 // 0 Comments

عراق میں مزید امریکی فوج بھیجی جائے گی! ☼ عراق میں جنوری ۲۰۰۵ء تک ۱۲ ہزار امریکی افواج مزید تعینات کی جائیں گی‘ جس کے بعد کل تعداد ڈیڑھ لاکھ کی ہو جائے گی جو کہ گذشتہ سال کی جارحیت کے بعد سے سب سے بڑی تعداد ہے۔ ☼ توقع ہے کہ ۲۰۰۴ء کے اختتام تک ۴ کروڑ ۳۴ لاکھ لوگ بغرضِ سیاحت امریکا کا سفر کریں گے۔ ۲۰۰۳ء کے مقابلے میں اس تعداد میں ۵ء۷ فیصد کا اضافہ ہوا ہے جو کہ امریکی ڈالر کی گرتی ہوئی قیمت کے سبب ہے۔ (ٹائم میگزین)

۱۰۵ فلسطینی جاں بحق

November 1, 2004 // 0 Comments

اسلحہ واپس لینے کی مہم ☼ اسلحہ واپس لینے کی امریکی فوج اور عراقی حکومت کی ۵ روزہ مشترکہ مہم کے دوران ایک مارٹر گولے کے عوض عراقیوں کو گیارہ امریکی ڈالر ادا کیے گئے۔ ☼ خودکشی کے دو معاہدے جن کے تحت جاپان میں گذشتہ ہفتے ۹ اشخاص نے اپنے آپ کو ہلاک کر لیا وہ انٹرنیٹ کے ذریعہ طے پائے تھے۔ ☼ سنگاپور کے ۴۰ ہزار ٹیکسی ڈرائیوروں کو پولیس نے دہشت گردوں پر نظر رکھنے کی ہدایت کی ہے۔ ☼ سنگاپور میں ۲۰۰۲ء سے اب تک ۴۰ ایسے جنگجو گرفتار کیے جاچکے ہیں جن کا مبینہ تعلق القاعدہ سے ہے۔ ☼ ایک تازہ سرکاری رپورٹ کے مطابق چین میں سال ۲۰۰۲ء میں ۶ کروڑ بالغ افراد موٹاپے کے مرض میں مبتلا ہیں۔ [مزید پڑھیے]

امریکا اور اسرائیل حالات کو بد سے بدتر بنا رہے ہیں!

October 16, 2004 // 0 Comments

توقع کے عین مطابق ہر گزرے دن کے ساتھ عالمی اسٹیج پر ہونے والے ڈرامائی واقعات کی رفتار تیز ہوتی جارہی ہے اور لگتا ہے کہ امریکا کے صدارتی انتخابات سے قبل اگلے تین ہفتوں میں اس پردۂ زنگاری سے بہت کچھ نمودار ہونے والا ہے۔ ہو سکتا ہے اسامہ بن لادن پکڑ لیے جائیں تاکہ بش کی گرتی ہوئی ساکھ کو سہارا ملے یا اسرائیل ایران پر حملہ کر دے لیکن اس وقت جو کچھ ہو رہا ہے اس سے تو بش کے لیے حالات بد سے بدتر ہوتے دکھائی دے رہے ہیں۔ ایک طرف امریکی خفیہ ایجنسی سی آئی اے کی تازہ رپورٹ نے جارج بش اور ان کے حواریوں کو پوری دنیا کے سامنے ان کے اصل مکروہ حیثیت کو برہنہ کر [مزید پڑھیے]

1 2