Abd Add
 

دولت

دنیا کی ۸۲ فیصد دولت پر ایک فیصد لوگ قابض

February 1, 2018 // 0 Comments

سوئٹزرلینڈ کے شہر ڈیوس میں ہونے والے ورلڈ اکنامک فورم کے اجلاس کے موقع پر Oxfam نے اپنی رپوٹ پیش کی، جس کے تحت سال ۲۰۱۷ء میں دنیا میں پیدا ہونے والی کُل دولت کا ۸۲ فیصد دنیا کے ایک فیصد امیر ترین افراد کے ہاتھوں میں رہا۔ جبکہ ۷ء۳؍ارب غریب ترین لوگ جو کہ دنیا کی آبادی کا نصف ہیں اپنے مالی حالات میں کوئی بہتری نہیں دیکھ سکے۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ کس طرح عالمی معیشت دولت مند اشرافیہ کو دولت کے خزانے جمع کرنے میں مدد کرتی ہے جبکہ کروڑوں افراد غربت اورمفلسی میں زندگی گزارنے پر مجبور ہیں۔ ۱۔ سال ۲۰۱۰ ء سے ارب پتی افراد کی دولت میں سالانہ ۱۳فیصد کی اوسط سے اضافہ ہو رہاہے۔یہ ایک عام [مزید پڑھیے]

ایک فی صد طبقہ، دنیا کی نصف دولت پر قابض

March 16, 2015 // 0 Comments

دنیا میں غربت کے خاتمے اور سماجی انصاف کے لیے سرگرم ایک برطانوی تنظیم نے دعویٰ کیا ہے کہ دنیا میں امیر اور غریب طبقات کے درمیان خلیج میں تیزی سے اضافہ ہورہا ہے اور آئندہ سال کے اختتام تک ایک فی صد طبقے کے پاس دنیا کی باقی ۹۹ فی صد آبادی سے زیادہ دولت ہوگی۔ برطانوی تنظیم ’’آکسفام‘‘ نے حال ہی جاری کی جانے والی اپنی ایک تحقیقی رپورٹ میں کہا ہے کہ ۲۰۰۹ء میں یہ ایک فی صد با اثر طبقہ دنیا کی ۴۴ فی صد دولت کا مالک تھا اور یہ دولت ۲۰۱۴ء میں ۴۸ فی صد تک جاپہنچی تھی۔ اس متمول طبقے کے برعکس دنیا کی ۸۰ فی صد آبادی صرف ۵ء۵ فی صد دولت کی مالک ہے اور اپنی [مزید پڑھیے]