Abd Add
 

صنعتی انقلاب

امنِ عالم کا چیلنج اور سیرت نبویﷺ

January 1, 2011 // 0 Comments

صنعتی اور سائنسی انقلاب تک امن کی بحالی کا کام کچھ زیادہ پیچیدہ نہ تھا مگر اب موجودہ صدی میں جب کہ دنیا کی آبادی بہت زیادہ بڑھ گئی ہے، زندگی کافی ایڈوانس ہو چکی ہے۔ انسانی قدریں رفتہ رفتہ رخصت ہو رہی ہیں اور ان کی جگہ حیوانی قدریں انسانی معاشرے میں اپنی جڑیں مضبوط کر رہی ہیں۔ آج کے انسان کی ترجیحات میں یہ بات شامل ہے کہ وہ زیادہ سے زیادہ پیسہ حاصل کرے۔ زن، زر اور زمین جنہیں کسی زمانے میں جھگڑے کی بنیاد کہا جاتا تھا اور انسان کو ان سے بچنے کی تلقین کی جاتی تھی آج کے انسان نے ان ہی چیزوں کو اپنی ترجیحات میں شامل کر لیا ہے۔ اگر کسی کو یہ چیزیں حاصل ہیں تو [مزید پڑھیے]

سیاحت و ثقافت ایک دوسرے سے باہم مربوط ہیں!

January 1, 2005 // 0 Comments

گیارہ ستمبر کے بعد سے خاصی کمی واقع ہونے کے باوجود بین الاقوامی سیاحت کے لیے لوگوں کی آمد و رفت بڑے پیمانے پر رہی ہے۔ پروفیسر شنجی یماشیتا ماہرِ ثقافتِ بشری نے روایتی ثقافتوں پر سیاحت کے اثرات پر ’’ایشیا پیسیفک‘‘ کی ہساشی کونڈو سے گفتگو فرمائی ہے: س: ثقافتِ بشری اور سیاحت بالکل ہی ایک دوسرے کی ضد معلوم ہوتی ہیں اور آپ کی دلچسپی کا موضوع مبدائے سیاحت ہے۔ ان میں کیا ربط ہے؟ ج: پہلے مجھے یہ وضاحت کرنے دیجیے کہ سیاحت سے میرا اپنا سامنا کس طرح ہوا۔ میں نے ماہرِ ثقافتِ بشری کی حیثیت سے اپنا فیلڈ ورک شروع کیا جو کہ انڈونیشیا میں سلاویسی جزیرہ کا ایک پہاڑی علاقہ ہے۔ میرا اپنا تصور یہ تھا کہ میں توراجا [مزید پڑھیے]