Abd Add
 

خارجہ پالیسی

ہمارا نظامِ حکومت سابقہ نظاموں سے مختلف ہوگا

September 16, 2004 // 0 Comments

وزیراعظم شوکت عزیز نے اپوزیشن پارٹیوں کو اپنی جانب سے امن کی پیشکش کرتے ہوئے قومی مسائل پر اتفاقِ رائے کے حصول کے لیے بہت ہی سنجیدہ کوشش کیے جانے کا وعدہ کیا ہے۔ واضح رہے کہ ملک کی اپوزیشن جماعتوں نے وزیراعظم کے لیے شوکت عزیز کے انتخاب کا بائیکاٹ کیا تھا۔ ۵ اگست کی شام روزنامہ ’’ڈان‘‘ کے ساتھ اپنے ایک پینل انٹرویو میں وزیراعظم نے اپنے اس عزم کا اظہار کیا کہ وہ اپنے حکومتی اہداف کے حصول میں بہت ہی سخت واقع ہوں گے۔ وہ اپنی کابینہ کے تشکیلِ نو کے ساتھ حکومتی پالیسیوں کو نتیجہ خیزی کے اعتبار سے بہتر بنائیں گے۔ لہٰذا وزارتِ عظمیٰ کا ان کا آئندہ ۳ سال سے زائد کا عرصہ طرزِ حکومت کے معاملے میں [مزید پڑھیے]