Abd Add
 

طالبان

افغانستان کی سب سے موثر جنگی و سیاسی قوت ہیں ان کو مختصرا طالبان کہا جاتا ہے نسلی اعتبار سے پشتون ہیں اور مسلکی اعتبار سے دیوبندی اور اہل حدیث کے مکتبہ فکر سے منسلک ہیں

طالبان کے ساتھ انٹرویو کے بعد خوف ختم ہو گیا!

August 16, 2021 // 0 Comments

’بیٹی کہاں ہو؟ جلدی گھر واپس آجاؤ، طالبان شہر میں داخل ہو گئے ہیں‘۔ یہ فقرے افغان خاتون صحافی بہشتہ ارغند کی والدہ کے ہیں، جو ۱۵؍اگست کی دوپہر کابل پر طالبان کے قبضے کے بعد خوف زدہ ہو گئی تھیں اور انہیں بیٹی کی زندگی کے بارے میں فکر لاحق تھی۔ بہشتہ ارغند افغان ٹیلی وژن نیٹ ورک ’طلوع‘ کے ساتھ وابستہ ہیں اور گزشتہ کئی برسوں سے صحافت کے شعبے میں خدمات انجام دے رہی ہیں۔ اتوار کو دارالحکومت کابل میں طالبان کے داخل ہونے کے وقت کو یاد کرتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ وہ کسی ذاتی کام کے سلسلے میں بازار گئی تھیں جب انہیں گھر سے کال موصول ہوئی۔ وائس آف امریکا سے بات کرتے ہوئے بہشتہ کا کہنا تھا [مزید پڑھیے]

کیا افغان فورسز طالبان سے نمٹ سکیں گی؟

June 1, 2021 // 0 Comments

آج کی افغان فوج سابق سوویت یونین کی شکست و ریخت کے وقت کی افغان فوج کے مقابلے میں خاصی کمزور ہے۔ مگر خیر، مزاحمت کرنے والے جنگجو بھی کچھ زیادہ طاقتور نہیں۔ افغانستان سے امریکا کے حتمی انخلا کا مرحلہ شروع ہوئے ایک ماہ ہوچکا ہے اور اب یہ عمل تیز ہوتا جارہا ہے۔ امریکی صدر جوزف بائیڈن نے اعلان کیا ہے کہ افغانستان سے تمام امریکی فوجی ستمبر تک نکال لیے جائیں گے۔ ایسے میں یہ بات بعید از قیاس لگتی ہے کہ وہ جولائی تک جاچکے ہوں گے۔ امریکی جرنیلوں نے پیکنگ کرلی ہے اور معاملات افغان حکومت اور فوج کے حوالے کرنے کا عمل نصف کی حد تک مکمل ہوچکا ہے۔ طالبان کی قیادت میں برپا کی جانے والی شورش کے [مزید پڑھیے]

1 2 3