Abd Add
 

شمارہ 16 جولائی 2015

پندرہ روزہ معارف فیچر
جلد نمبر: ۸ ۔ شمارہ نمبر: ۱۴

پاک چین اقتصادی راہداری اور ممکنہ خطرات

July 16, 2015 // 0 Comments

نیم فوجی دستوں کی وردیوں میں ملبوس مسلح افراد نے کراچی جانے والی بس کو روک کر مسافروں کے شناختی کارڈ چیک کیے اور اس کے بعد ان تمام افراد کو قتل کر دیا، جو اُن کے خیال میں پاکستان کے مغربی صوبے بلوچستان کے مقامی نہیں تھے۔ ۲۹ مئی ۲۰۱۵ء کو بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ کے جنوب میں ایک ویران سڑک پر پیش آنے والے اس واقعے میں مجموعی طور پر ۲۲ پشتون قتل ہوئے۔ اس حملے کی ذمہ داری صوبے میں سرگرم علیحدگی پسند گروہوں میں سے ایک متحدہ بلوچ آرمی نے قبول کی۔ بلوچستان میں موجودہ عسکریت پسندی کا آغاز ایک دہائی قبل ہوا تھا۔ ۱۹۴۷ء میں برطانیہ سے آزادی حاصل کرنے کے بعدپاکستان کے سب سے بڑے، غیر گنجان آباد اور [مزید پڑھیے]

چین اور مشرقِ وسطیٰ

July 16, 2015 // 0 Comments

سیکڑوں برسوں تک مسافر قاہرہ کے روایتی بازار خان الخلیلی کی چکر دار گلیوں میں قالینوں، زیورات، مسالوں اور تانبے کی بنی اشیاء پر بھاؤ تاؤ کرتے رہے۔ آج ان اشیاء کا دستکاری کے کسی مقامی کارخانے کی بہ نسبت چین کی کسی فیکٹری میں بڑے پیمانے پر تیار ہونے کا امکان زیادہ ہے۔ چین اور مشرقِ وسطیٰ کے بڑھتے تعلقات میں تجارت کو مرکزی اہمیت حاصل ہے۔ گزری دہائی میں اس میں ۶۰۰ فیصد سے زیادہ اضافہ ہوا ہے اور ۲۰۱۴ء میں یہ ۲۳۰؍ارب ڈالر تک پہنچ گئی ہے۔ بحرین، مصر، ایران اور سعودی عرب سب سے زیادہ چین سے مال درآمد کرتے ہیں۔ ایران، عمان اور سعودی عرب سمیت خطے کے کئی ممالک کی سب سے بڑی برآمدی منڈی بھی چین ہے۔ اپریل [مزید پڑھیے]

اسرائیل کو تنہائی کا خوف!

July 16, 2015 // 0 Comments

گزشتہ ایک ہفتہ میں اسرائیل کو دو قانونی محاذوں پر نقصان اٹھانا پڑا۔ پہلی دفعہ ۲۲ جون کو، جب اقوامِ متحدہ کی انسانی حقوق کی کونسل نے گزشتہ سال غزہ میں پچاس روز جاری رہنے والی جنگ کے بارے میں رپورٹ جاری کی۔ رپورٹ میں اسرائیل کی سخت سرزنش کی گئی ہے۔ اس کے تین دن بعد فلسطین نے عالمی فوجداری عدالت (International Criminal Court) کی رکنیت (جو اسے سال کے آغاز میں دی گئی) کا فائدہ اٹھاتے ہوئے پہلی دفعہ باضابطہ طور پر عدالت میں درخواست جمع کروائی، جس میں اسرائیل پر عالمی قوانین توڑنے اور مغربی کنارے پر غیرقانونی تعمیرات کا الزام لگایا گیا ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ اسرائیل پر غزہ میں جنگی جرائم کرنے پر بھی عدالت میں کیس دائر کیا [مزید پڑھیے]